مکہ مکرمہ کے سکول میں طالب علم کی موت کی وجہ برین ہیمرج قرار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

دو ہفتے قبل مکہ مکرمہ کے ایک سکول میں کلاس روم کے اندر ایک 8 سالہ لڑکا اچانک زمین پر گرگیا، اسے ہسپتال لے جایا گیا مگر وہ دم توڑ گیا تھا۔

مکہ مکرمہ کے النور تخصیصی ہسپتال نے اس حوالے سے اپنی میڈیکل رپورٹ جاری کردی۔ اخبار ’’ سبق‘‘ کے مطابق رپورٹ میں تصدیق کی گئی کہ 8 سالہ نواف عبد الرزاق اللهيبی کی موت دماغ میں اچانک اور شدید اندرونی خون بہنے کی وجہ سے ہوئی۔ برین ہیمرج سے اسے دل کا دورہ پڑا اور اس کی خون کی گردش کی رفتار بھی گر گئی۔

بچے کے اہل خانہ نے بتایا کہ انہوں نے نواف کی میت وصول کرلی، اس کی نماز جنارہ مسجد حرام میں ادا کی گئی اور تدفین معلاۃ قبرستان میں کردی گئی ہے۔

بڑے پیمانے پر تحقیقات

سعودی عرب کے مقدس دارالحکومت میں سکیورٹی حکام نے نواف کی موت کے بعد بڑے پیمانے پر تحقیقات شروع کر دی تھیں۔ سکول میں گرنے کے بعد نواف کو ہلال احمر کا عملہ پہلے حرا جنرل ہسپتال لے کر گیا۔ پھر اسے النور سپیشلائزڈ ہسپتال منتقل کردیا گیا جہاں پہنچ کر وہ دم توڑ گیا۔

طالب علم کے والدین نے اس سے قبل انکشاف کیا تھا کہ انہیں عمرہ محلے میں واقع سکول سے فون آیا تھا کہ نواف بغیر کسی وجہ کے کلاس روم کی زمین پر گرگیا، اسے حرا جنرل ہسپتال منتقل کیا گیا ہے اور اس کی حالت تشویشناک ہے۔

فوری کمیٹی کی تشکیل

نواف کے اہل خانہ ہسپتال پہنچے تو ڈاکٹروں نے حالت تشویشناک ہونے کے باعث اسے النور ہسپتال منتقل کرنے کا فیصلہ کیا جہاں پہنچ کر اس کی وفات ہوگئی۔ اب موت کی وجوہات میں دماغ میں شدید اور اچانک خون بہنا، دل کا دورہ پڑنا، خون کی گردش میں تیزی سے کمی کو شامل کیا گیا ہے۔

نواف کے اہل خانہ نے وزارت تعلیم سے تحقیقات شروع کرنے کا کہا اور مطالبہ کیا کہ فوری کمیٹی بنائی جائے۔ اس کی موت کی وجوہات کا تعین کرنے کیلئے سکول کے کیمروں کی فوٹیج کو بھی استعمال میں لایا جائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں