ریاض کتاب میلے میں 68 غیر عرب اشاعتی اداروں کی شرکت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں لٹریچر، پبلشنگ اینڈ ٹرانسلیشن اتھارٹی کے سربراہ ڈاکٹر محمد حسن علوان نے انکشاف کیا ہے کہ ریاض انٹرنیشنل بک فیئر 2022 کا حجم پچھلے ورژن کے مقابلے میں دگنا ہو گیا ہے اور عرب اور بین الاقوامی اشاعتوں کی طرف سے اس کو بہت زیادہ پذیرائی دی گئی ہے۔

’العربیہ‘ چینل سےبات کرتے ہوئے انہوں نے اس سال کے لیے نئی نمائش کے بارے میں مزید کہا کہ اس میں 68 سے زیادہ غیر عرب اشاعتی اداروں نے شرکت اور پہلی بار ریاض بین الاقوامی کتاب میلے میں متعدد زبانوں میں لٹریچر شامل کیا گیا۔ غیرعربی لٹریچر کی شمولیت ریاض میں بہت سے غیر عربی قارئین کے پیش نظر ہے۔

اس سال کے لیے مہمان خصوصی کے طور پر تونس کو منتخب کرنے کی وجہ پر انہوں نے کہا کہ تونس کی ایک قدیم ثقافت کا حامل ایک عظیم تہذیب ہے، جو کسی بھی کتاب میلے میں ایک اضافہ ہے۔ بہت سارے ثقافتی موضوعات ہیں۔

انہوں نے گفتگو کے اختتام پر کہا کہ یہ مملکت سعودی عرب اور برادر جمہوریہ تونس کے درمیان ثقافتی تعلقات کو مضبوط کرنے کا ایک قدم ہے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ 2022 ریاض بین الاقوامی کتاب میلےکے آغاز کے بعد سے پہلے دو دنوں میں بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی۔ کتاب میلے کے ساتھ ساتھ اس میں متنوع ثقافتی پروگرام، تقریبات، مباحثے،سیمینارز اور ادبی اور موسیقی کی شامیں شامل ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں