بغداد کے گرین زون پرایک اور راکٹ حملہ،متعدد سکیورٹی اہلکار زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

عراق کے دارالحکومت بغداد کے انتہائی سکیورٹی والےعلاقے گرین زون کے ارد گرد جمعرات کونوراکٹ گرے ہیں۔

گرین زون میں عراق کی سرکاری عمارتیں، پارلیمان اور غیر ملکی مشن واقع ہیں۔یہ راکٹ حملہ پارلیمنٹ کےاجلاس سے چندے قبل کیا گیا ہے۔اس میں نئے صدر جمہوریہ کا انتخاب کیا جاناتھا۔

عراقی فوج نے ایک بیان میں مزید تفصیل بتائے بغیرکہاہے کہ اس حملے میں سکیورٹی فورسز کے متعدد اہلکار زخمی ہوئے ہیں۔البتہ ایک سکیورٹی اہلکار نے اے ایف پی کو بتایا کہ حملے کے نتیجے میں 10 افراد زخمی ہوئے ہیں۔

انھوں نے مزید بتایا کہ ان میں سے ایک میزائل پارلیمنٹ کے قریب گرا ہے۔رائٹرز نے ایک عینی شاہد اور پارلیمان کے ذرائع کے حوالے سے اطلاع دی ہے کہ گرین زون میں کم سے کم تین راکٹ گرے ہیں۔

فوری طور پرکسی گروپ نے اس راکٹ حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی۔گرین زون میں گذشتہ ماہ بھی اسی انداز میں راکٹ حملہ کیاگیا تھا۔راکٹ باری کے وقت پارلیمان کا اجلاس جاری تھا اورنئے اسپیکر کے انتخاب کے لیے ووٹنگ ہورہی تھی۔

واضح رہے کہ گرین زون پرراکٹ حملے حالیہ برسوں میں ایک معمول بن چکے ہیں۔عام طورپرایران کے حمایت یافتہ ملیشیا گروپوں پران راکٹ حملوں میں ملوّث ہونے کا الزام عاید کیا جاتا ہے اور وہ امریکا سمیت مغربی اہداف کو نشانہ بناتے رہتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں