سعودی عرب: رشتہ دار کا معذور بچے پر بہیمانہ تشدد، ویڈیو وائرل ہونے پر غم و غصہ

سوشل میڈیا پر واقعہ کی شدید مذمت، واقعہ ایک سال پرانا، طائف میں پیش آیا: پولیس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مکہ المکرمہ پولیس نے اعلان کیا کہ طائف گورنری میں ایک بچے کو اس کے ایک رشتہ دار نے تشدد کا نشانہ بنایا ہے۔ ویڈیو وائرل ہونے پر لوگوں میں غم و غصہ پھیل گیا۔

سعودی عرب کے مقدس دارالحکومت کی پولیس کے ترجمان نے بتایا کہ سوشل میڈیا پر معذور بچے پر تشدد کی ویڈیو وائرل ہوئی۔ اس پر طائف پولیس سے رابطہ کرکے دونوں فریقوں کو طلب کیا گیا

ترجمان نے مزید کہا کہ تحقیقات سے معلوم ہوا کہ کلپ ایک سال پہلے کا ہے۔ سکیورٹی حکام نے اس وقت واقعہ کی رپورٹ پیش نہیں کی تھی۔ واقعہ کو مجاز اتھارٹی کے سپرد کردیا گیا تھا۔

کلپ میں ایک معذور بچے کو ایک شخص کی جانب سے تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے دکھایا گیا تھا۔ کلپ کے ساتھ گردش کرنے والی معلومات سے پتہ چلتا ہے کہ یہ واقعہ طائف میں پیش آیا۔ ایک ٹوئٹر اکاؤنٹ پر ٹویٹ کی گئی تھی جس میں کہا گیا کہ میری خواہش ہے کہ آپ اس معاملے کو دیکھیں، اور اس کیس کو حل کرنا شروع کریں۔ متعلقہ مرکز نے ایک ٹویٹ میں یہ کہتے ہوئے جواب دیا کہ کوآرڈینیشن جاری ہے۔ ضروری اقدامات کیلئے متعلقہ حکام سے رابطہ کیا جارہا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں