یمن میں دیر پا امن کے قیام کی عالمی مساعی کی حمایت کرتے ہیں: سعودی عرب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب نے ایک بار پھرباور کرایا ہے کہ الریاض پڑوسی ملک میں جاری جنگ کو امن میں بدلنے اور ملک میں پائیدارامن کے قیام کے لیے عالمی برادری کی طرف سے کی جانے والی کوششوں کی حمایت کرتا ہے۔

منگل کے روز سعودی عرب کی وزارتی کونسل [کابینہ] کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ مملکت یمن میں پائیدار امن کے قیام کے لیے عالی مساعی کی حمایت جاری رکھے گی۔ بیان میں عالمی برادری پر زور دیا گیا کہ وہ حوثی ملیشیا کو دہشت گرد قرار دے، اس کا ہرسطح پر بائیکاٹ کرے اور اس کے مالی ذرائع مسدود کرنے کے لیے اقدامات کرے۔

خیال رہے کہ منگل کو سعودی عرب کی کابینہ کا اجلاس خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود کی زیرصدارت جدہ میں السلا محل میں منعقد ہوا۔

خیال رہے کہ گذشتہ جمعرات کو سعودی عرب کے اقوام متحدہ میں سفیر عبدالعزیز بن محمد الواصل نے عالمی برادری پر زور دیا تھا کہ وہ حوثی ملیشیا کو دہشت گرد تنظیم قرار دے۔ انہوں نے کہا کہ حوثی ملیشیا یمن میں جنگ بندی رکاوٹ ڈالنے کے ساتھ یمنی شہروں کا محاصرہ جاری رکھے ہوئے ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں