مقبوضہ بیت المقدس:اسرائیلی پولیس نے چاقوسے حملہ کرنے والے فلسطینی کو’بےاثر‘کردیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اسرائیلی پولیس نے ہفتے کے روز مقبوضہ بیت المقدس (مشرقی یروشلم)میں چاقوکے وارکرنے والے ایک مشتبہ فلسطینی شخص کو’بےاثر‘کردیاہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ چاقو کے حملے میں ایک شخص شدید زخمی ہوا ہے اوراسے اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔اسرائیلی میڈیا کے مطابق چاقوحملے میں زخمی ہونے والا شخص 20 سالہ سے زیادہ عمر کا مذہبی یہودی تھا۔

پولیس کاکہنا ہے کہ مشتبہ شخص نے ایک راہگیرپر چاقو سے حملہ کیا اورفرارہوگیا تھا۔ایک مختصرتلاش کے بعداس کومشرقی یروشلم کے علاقے شیخ جراح میں جالیا گیا اوراس کو’’غیرجانبدار‘‘کردیاگیا تھا۔پولیس نے فوری طورپراس کی حالت یاشناخت کی وضاحت کیے بغیرکہا ہے۔

حالیہ مہینوں میں اسرائیل مخالف حملوں میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے اورمقبوضہ مغربی کنارے میں اسرائیلی فوج کم وبیش روزانہ چھاپا مارکارروائیاں کررہی ہے جس سے اسرائیل اورفلسطینوں کے درمیان تنازع میں شدت آئی ہے۔

اقوام متحدہ کے مطابق رواں سال 115 فلسطینی عسکریت پسند اورعام شہری مارے جاچکے ہیں۔ مغربی کنارے میں گذشتہ سات سال میں ایک سال میں ہلاکتوں کی یہ سب سے زیادہ تعداد ہے۔

یادرہے کہ اسرائیل نے1967 کی چھے روزہ جنگ میں مشرقی یروشلم پرقبضہ کرلیاتھا اور بعد میں اسے ریاست میں ضم کرلیا تھامگربیشتربین الاقوامی برادری اس کے اس اقدام کو تسلیم نہیں کرتی ہے۔مقبوضہ بیت المقدس میں قریباً 200،000 اسرائیلی رہتے ہیں اور300،000 سے زیادہ فلسطینی آباد ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں