ہسپانوی مداح قطر ورلڈ کپ کے لیے جاتے ہوئے ایران میں لاپتہ ہو گیا

فٹ بال کے شوقین سینتیاگو سانچیز نے آخری مرتبہ ایران۔ عراق سرحد سے اپنی تصاویر ارسال کی تھیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ہسپانوی وزارت خارجہ نے تصدیق کی ہے کہ ایک 41 سالہ ہسپانوی فٹ بال مداح نومبر میں ہونے والے ورلڈ کپ میں شرکت کے لیے قطر جاتے ہوئے ایران میں لاپتہ ہو گیا ہے۔

سینٹیاگو سانچیز کے دوستوں نے آخری مرتبہ ان کے بارے میں یکم اکتوبر کو سنا تھا جب سانچیز نے عراق ایران سرحد پر اپنی تصاویر بھیجی تھی۔ ان تصاویر میں سے ایک "ایران میں داخل ہوں" کے نشان کے ساتھ بھی تھی۔

بعض ہسپانوی میڈیا ذرائع کے مطابق ایرانی حکام نے سانچیز کو گرفتار کر لیا ہے۔ میڈرڈ میں اس کے والدین نے بھی ’’ٹیلی سنکو‘‘ ٹی وی چینل کو بتایا کہ زیادہ امکان اس کی ایران میں گرفتاری کا ہی ہے۔

والدہ سیلیا نے کہا کہ اس بات کا 99 فیصد امکان ہے کہ وہ ایران کی کسی جیل میں ہے، تاہم ہسپانوی سفارت خانے نے میری بیٹی کو بتایا کہ وہ جیل جانے سے پہلے اس کی تصدیق نہیں کر سکتے ہیں۔ سفارتخانے نے کہا کہ سانچیز کی کسی جیل میں متوقع موجودگی دیکھنے کیلئے ایرانی حکومت سےاجازت لیں گے۔

ہسپانوی وزارت خارجہ نے تصدیق کی کہ سانچیز ایران میں ہے اور تہران میں اس کا سفارت خانہ اسے قونصلر مدد فراہم کرنے کے لیے فوری طور پر اس کے ٹھکانے کے بارے میں معلومات حاصل کر رہا ہے۔

سانچیز نے گزشتہ جنوری کو میڈرڈ سے روانہ ہوا تھا، اس نے یورپ اور ترکی کا سفر کیا اور عراق میں داخل ہونے سے پہلے خیموں، ہوٹلوں اور گھروں میں سوتا رہا۔

گزشتہ ماہ، سانچیز نے عراقی کردستان کے شہر زخو میں رائٹرز کو بتایا تھا کہ وہ ہسپانوی قومی ٹیم سے ملنے کا خواہاں ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں