پاکستان سعودیہ سٹیئرنگ کمیٹی کا پہلا اجلاس: توانائی کے شعبہ میں تعاون پر تبادلہ خیال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی وزیر توانائی شہزادہ عبدالعزیز بن سلمان اور پاکستانی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے ویڈیو کانفرنس کے ذریعے اقتصادی محور کے لیے سٹیئرنگ کمیٹی کے اپنے پہلے اجلاس کے دوران توانائی کے شعبے میں تعاون پر تبادلہ خیال کیا ہے۔

سعودی خبر ایجنسی کے مطابق شہزادہ عبدالعزیز نے توانائی کے شعبے میں تعاون کا حوالہ دیتے ہوئے کہا

اس سٹیئرنگ کمیٹی کے فریم ورک کے تحت اس وقت کئی موضوعات زیر بحث ہیں۔ خاص طور پر پیٹرولیم اور سپلائی کے شعبوں، پیٹرو کیمیکل، بجلی، قابل تجدید توانائی، صنعت اور نقل و حمل کے علاوہ بہت سے شعبوں میں تعاون پر گفتگو کی جارہی ہے۔

شہزادہ عبدالعزیز نے اس بات کی تصدیق کی کہ سعودی عرب پاکستان کو اپنے ترقیاتی منصوبوں اور پروگراموں میں ایک اہم شراکت دار سمجھتی ہے ۔

دونوں ممالک سعودی پاکستانی سپریم کوآرڈینیشن کونسل کی ذیلی کمیٹی کے ذریعے اپنے درمیان تعاون کے ذرائع کو بڑھانے کے خواہاں ہیں۔ شہزادہ عبد العزیز نے کہا پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان تعاون اور مختلف پراجیکٹس کو فعال کرنا درست راستے پر ہے۔

اجلاس کے اختتام پردونوں فریقوں نے کمیٹی کے کام کو مکمل کرنے، اس میٹنگ کے نتائج کی پیروی کرنے اور دونوں طرف کی ورک ٹیموں کے درمیان مشترکہ کوآرڈینیشن جاری رکھنے پر اتفاق کیا۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ سٹیئرنگ کمیٹی کا کام توانائی، صنعت، معدنی دولت، تجارت، مالیات، ماحولیات، زراعت، نقل و حمل، لاجسٹکس، مواصلات، انفارمیشن ٹیکنالوجی، سیاحت اور سرمایہ کاری سمیت کئی شعبوں کا احاطہ کرتا ہے۔

سٹئیرنگ کمیٹی کا یہ پہلا اجلاس تھا۔ دوطرفہ سپریم کوآرڈینیشن کونسل کے اجلاس کی اس سے قبل وزیر اعظم پاکستان اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے مشترکہ طور پر صدارت کر چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں