قومی دن: سڑکوں پر گاڑیوں کا بے ہنگم پن روکنے کے لیےاماراتی پولیس کی وارننگ جاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

متحدہ عرب امارات کی قومی دن کی خوشیاں مناتے ہوئے آپے سے باہر ہو کر سڑکوں پر ڈرائیونگ کے ذریعے دوسروں کی زندگیوں کو خطرے میں ڈالنے والوں کو پیشگی انتباہ کر دیا گیا ہے۔

سڑکوں پر ٹریفک کو محفوظ اور رواں دواں رکھنے والے ماہرین اس امر پر پہلے سے زور دے رہے تھے کہ 51 ویں قومی دن کا جشن مناتے ہوئے بعض لوگ لاپرواہی کا شکار ہو سکتے ہیں۔

تاہم اس کا نوٹس لیتے ہوئے اماراتی پولیس نے پولیس خطرناک ڈرائیونگ روکنے کے لیے سڑکوں کر موجودگی اور گشت یقینی بنائے گی۔ پولیس نے اعلان کیا ہے کہ سٹرکوں پر لاپرواہی کا ؐمظاہرہ کرنےوالوں کو 544 ڈالر جرمانے کے علاوہ ان کے وہیکلز بھی دوماہ کے لیے ضبط کیے جا سکیں گے۔

اسی طرح کی صورت حال کا اظہار پاکستان کے یوم آزادی کے موقع پر بھی بڑے شہروں میں بالعموم دیکھنے میں آتا رہتا ہے۔ جب منچلے بائیک سوار اور کار سوار یہ سمجھ کر سڑکوں پر نکلتے ہیں کہ صرف وہی آزاد ہیں، اس لیے جو چاہیں کریں اور کسی دوسرے کی زندگی و سلامتی کی پروا کرنے کی چنداں ضرورت نہیں ہے۔

نتیجتاً ان ممالک کی طرح جو منچلے یوم آزادی کو مادر پدر آزادی کا دن بنا ڈالتے ہیں بطور خاص حادثوں کا بھی شکار ہوتے ہیں ۔

واضح رہے پاکستان میں بائیک سواروں کے حادثات عام طور پپر بھی زیادہ ہوتے ہیں اور بائیک سواروں کی ٹانگیں ، بازو ٹوٹنا عام سے بات ہے۔ جبکہ خطرناک 'ہیڈ انجیری' کے مسائل اس کے علاوہ ہوتے ہیں۔

شاید اسی کا خیال رکھتے ہوئے امارات کی پولیس نے قومی دن کے سلسلے میں پیشگی انتباہ جاری کر دیا ہے۔ جس میں وہیکلز پر خوفناک ڈرائیونگ کے تجربات سے گذرنے اور اپنے تئیں دلچسپ کرتب دکھانے کی کوشش کرنے والوں کو قومی دن پر ٹھنڈا اور آرام سے رہنے کے لیے کہا گیا ہے۔

امارات کے قومی دن کی مناسبت سے حکومت کی طرف سے 'لانگ ویک اینڈ 'کا بھی اعلان کر رکھا گیا ہے۔ اس لیے لوگوں کے پاس سڑکوں پر نکلنے اور دھماچوکڑی کا کافی موقع ہو گا۔

اس پس منظر میں تھامس ایڈلیمان مینجنگ ڈائریکٹر روڈ سیفٹی نے ' العربیہ ' سے بات کرتے ہوئے کہا ' قومی دن کے موقع ٹریفک حادثات کا خطرہ بڑھ جاتا ہے، وجہ لاپرواہی ہوتی ہے کہ قومی پرچم تھامے اور گاڑیوں پر سجائے شہری بڑے ' ٹرانس ' میں جارہے ہوتے ہیں۔ اسی دوران لاپرواہی ہو جاتی ہے۔ '

انہوں نے کہا اس کے لیے سب سے زیادہ ضروری بات یہی ہے کہ ہم خود احتیاط کریں اور دوسروں کی پراو کرتے ہوئے گاڑی چلائیں۔ '

وگرنہ خطرات بڑھ جاتے ہیں اپنے لیے بھی اور دوسروں کے لیے بھی ۔ کیونکہ اندھا دھند ڈارئیونگ کرنا اپنے ملک اور شہر کی سڑکوں پر دوسرے لوگوں کی زندگیاں خطرے میں ڈالنے والی بات ہوتی ہے۔'

اماراتی پولیس نے قومی دن کی مناسبت سے سڑکوں پر نکلنے والے شہریوں کے لیے یہ ہدایت بھی جاری کی ہے کہ وہ اپنے ڈارئونگ لائسنس ہمراہ رکھیں۔ باہم گاڑیوں کی دوڑیں لگانے سے گریز کریں ، گاڑی یا بائیک کی نمبر پلیٹ کو چھپانے کی کوشش نہ کریں، گاڑی چلاتے ہوئے کرتب کرنے کی کوشش نہ کریں اور سیٹ بیلٹ باندھ کر رکھیں۔'

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں