کتوں کی بھی موجیں لگ گئیں۔ دبئی میں کتے ٹیکسی پر سفر کر سکیں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

دنیا کے مشہور تجارتی مرکز دبئی کے کتے بھی اب ٹیکسی پر سفر انجوائے کر سکیں گے۔ یہ اہتمام دبئی پالتو جانوروں کے لیے شویتا بھاٹیہ نے کیا ہے۔ ان کا سلوگن ہے۔ کسی بھی وقت ، کہیں بھی۔ شویتا پالتو جانوروں کے لیے بنائی گئی ایک ٹیکسی کی مالک ہیں اور خاص قسم کے گاہکوں کے ارد گرد رہتی ہیں۔

بھاٹیہ کی خدمات چوبیس گھنٹے دستیاب ہیں۔ بھاٹیہ نے پالتو جانوروں کو ان کے مالکان کے ہمراہ یا مالکان کے بغیر ہر دو طرح کی سہولت پیش کی ہے کہ ہر دو صورتوں میں پالتو جانوروں کو ٹیکسی پر ان کی مقرر کردہ منزل پر پہنچا سکتے ہیں۔

بھاٹیہ کے مطابق ' یہ چیز مجھے بہت بہت خوش رکھتی ہے کیونکہ میں خود بھ پالتو جانوروں کے لیےجذبہ رکھتی ہوں۔' میں پالتو 'جانوروں کے والدین' کی مدد کرتے ہوئے انہیں معاونت دیتے ہوئے بہت خوشی محسوس کرتی ہوں۔' صرف پالتو جانوروں کے والدین ہی نہیں ان کے ان 'پیارے بچوں ' کی خدمت کر کے بھی خوش ہوتی ہوں۔'

بھاٹیہ کا کہنا ہے کہ کارپوریٹ سیکٹر کی ملازمت چھوڑ کر اس طرف آئی ہیں کہ اپنا کاروبار کر سکیں۔ پالتو جانور پانے والے لوگ متحدہ عرب امارات میں کافی مشکلات محسوس کرتے ہیں۔ خصوصا پالتو جانوروں کا ایک جگہ سے دوسری جگہ منتقل کرنے کے دوران انہیں مشکل کا سامنا رہتا ہے کہ بہت سے ٹیکسی ڈرائیور جانوروں کا اپنے ساتھ پاکیزگی اور طہارت کے پہلو کی وجہ سے نہیں بٹھاتے۔

امارات میں کتوں کو نارمل ٹیکسی میں بٹھانے کی اجازت بھی نہیں ہے کہ امارات کا ایک اپنا کلچر اور روایات ہیں۔ اس لیے اس سے پہلے دبئی میں کتوں کے لیے یہ کبھی آسان نہ ہوتا تھا۔ لیکن ابھ بھاٹیہ کی وجہ سے ممکن ہو گیا ہے۔ بھاٹیہ نے اپنی ٹیکسیوں کا ایک بیڑہ بنا لیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں