فلسطینی کار چوری کرکے غلطی سے اسرائیلی پولیس چوکی میں داخل ہوگیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی پولیس نے کہا ہے کہ ایک فلسطینی نے اتوار 4 دسمبر کو اسرائیل کے مرکزی ہوائی اڈے پر جاتے ہوئے ایک گاڑی چوری کی اور ایک چیک پوائنٹ پر دھاوا بول دیا۔ پولیس نے اس کی گرفتاری کے لیے ہائی الرٹ کر دیا۔ حکام کا کہنا ہے کہ چور اپنا راستہ بھٹک گیا اور جو ہوا وہ حملے کی کوشش نہیں تھی۔

ستمبر کے بعد سے ایسے ہی دوسرے واقعے میں سوشل میڈیا پر گردش کرنے والی ایک ویڈیو کلپ میں مسافروں کو بین گوریون ایئرپورٹ کے ڈیپارچر ہال میں اپنے سامان کے پاس لیٹے ہوئے دکھایا گیا جب کہ لاؤڈ اسپیکر کے ذریعے ہدایات کی گونج سنائی دے رہی تھی۔

اسرائیلی پولیس نے بتایا کہ مشتبہ شخص، مقبوضہ مغربی کنارے سے تعلق رکھنے والا ایک فلسطینی ہے جو اسرائیل میں غیر قانونی طور پر مقیم ہے۔ وہ چوری شدہ کار میں ہوائی اڈے کی چوکی پر پہنچا اور مین ٹرمینل کی طرف جانے لگا۔ اس کا مختصر تعاقب ہوا جس کے دوران اسے گولی مار کر زخمی کردیا گیا جس کے بعد اس کی گرفتاری عمل میں لائی گئی ہے۔

اسرائیلی حکام کا کہنا تھا کہ گذشتہ واقعے کی طرح یہ خیال کیا جاتا ہے کہ مشتبہ شخص نے تل ابیب اور یروشلم کے درمیان مرکزی شاہراہ سے غلط موڑ لیا اور اس کا مطلب ہے کہ فرار ہونے کی اس کی کوشش اسے اسرائیل کی سب سے محفوظ تنصیبات میں لے گئی۔ جبکہ پولیس ترجمان نے کہا کہ ایسا تقریباً ہر ہفتے ہوتا ہے۔

اسرائیل کی سڑکوں پر حملوں میں اضافے اور مغربی کنارے میں اسرائیلی فوج کے چھاپوں کا دائرہ بڑھ رہا ہے۔ تشدد نے انتہائی دائیں بازو کے عروج میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ امکان ہے کہ اسرائیل کی نئی حکومت کے آنے کے بعد تشدد کے واقعات میں مزید اضافہ ہوگا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں