مشرقی شام میں امریکی حملے میں داعش کے دو کمانڈر ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اتوار کے روز امریکی سینٹرل کمانڈ نے اعلان کیا ہے کہ گذشتہ صبح مشرقی شام میں امریکی افواج کے ہیلی کاپٹر کے ذریعے کیے گئے فضائی حملے میں داعش کے دو سیینیر کمانڈر مارے گئے۔

قیادت نے ایک بیان میں کہا کہ ایک رہ نما مشرقی شام میں تنظیم کی کارروائیوں میں ملوث تھا۔ فضائی حملے کی کامیابی کو یقینی بنانے کے لیے وسیع منصوبہ بندی کی گئی۔

اس نے مزید کہا کہ ابتدائی اندازوں سے ظاہر ہوتا ہے کہ حملے کے نتیجے میں عام شہریوں میں کوئی ہلاکت یا زخمی نہیں ہوا۔

بیان میں سینٹرل کمانڈ کے ترجمان جو بکینو کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ داعش خطے کی سلامتی اور استحکام کے لیے مسلسل خطرہ ہے۔ امریکی فضائی حملہ تنظیم کے خاتمے کو یقینی بنانے کے لیے سینٹرل کمانڈ کے غیر متزلزل عزم کی تصدیق کرتا ہے۔"

بکینو نے کہا کہ ’داعش‘ کے رہ نماؤں کی ہلاکت سے مشرق وسطیٰ میں مزید عدم استحکام پیدا کرنے والے حملوں کی منصوبہ بندی اور انجام دینے کی تنظیم کی صلاحیت متاثر ہو گی۔"

سنہ 2019ء میں ’داعش‘کے خاتمے کے اعلان کے بعد سے امریکی افواج اور واشنگٹن کی قیادت میں بین الاقوامی اتحاد تنظیم کے رہ نماؤں کا تعاقب کر رہا ہے،اور وقتاً فوقتاً وہ شام میں تنظیم کے مشتبہ ارکان کے خلاف چھاپے، یا فضائی حملے کرتے رہتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں