انسانی سمگلنگ روکنے اور متاثرہ افراد کی بحالی کے لیے سعودی عرب کا معاہدہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب نے انسانی سمگلنگ کو روکنے کے لیے اگلے محلے کے اقدامات کی منظوری دے دی ہے۔

اس سلسلے میں سعودی عرب کے انسانی حقوق کمیشن اور بین الاقوامی تنظیم برائے مہاجرت نے دوسرے مرحلے کے منصوبے کی منظوری دی ہے تاکہ مملکت کو انسانی سمگلنگ کے اثرات سے محفوظ رکھا جا سکے۔

انسانی حقوق کمیشن اور انسانی سمگلنگ روکنے سے متعلق کمیٹی کے سربراہ ڈاکٹر ہالا التواجیری نے اور آئی او اہم نے ایک معاہدے پر دستخط کیے ہیں۔ اس معاہدے کے تحت دونوں ادارے مملکت کو اور معاشرے کو انسانی سمگلنگ کے اثرات سے بچائیں گے۔

معاہدے میں مشترکہ میکا نزم پر بھی اتفاق ہوا ہے تاکہ انسانی سمگلنگ کے متاثرہ افراد کو بحالی میں مدد دی جا سکے۔ اس معاہدے کے سلسلے میں ڈاکٹر التواجیری نے کہا ' اس معاہدے سے مملکت کی انسانی سمگلنگ کے خلاف اور متاثرہ افراد کی بحالی کے لیے کمٹمنٹ کا اندازہ ہوتا ہے۔

بحرین میں آئی او ایم کے مشن کے سربراہ محمد الزرقانی نے کہا ' انسانی سمگلنگ ایک بین الاقوامی جرم ہے اس سے نمٹنے کے لیے باہمی تعاون اور کوششوں کی ضرورت ہے۔'

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں

  • مطالعہ موڈ چلائیں
    100% Font Size