شام میں زلزلہ:24 گھنٹے کے بعد ملبے تلے دبے شخص کو زندہ نکال لیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شام میں زلزلے کے 24 گھنٹے کے بعد ایک منہدم عمارت کے ملبے تلے دبے شخص کوزندہ نکال لیا گیا ہے۔

شام کے شہری دفاع نے منگل کواس شخص کو ملبے سے نکالنے کی ویڈیوشیئرکی ہے۔اس میں ادلب کے ایک چھوٹے قصبہ میں زلزلہ سے مکمل طورپرتباہ شدہ ایک پانچ منزلہ عمارت کے نیچے سے ریسکیو ٹیموں نے کھدائی کے بعد اس نوجوان کو نکالا ہے۔اس کی شناخت صرف علی کے نام سے ہوئی ہے۔

شہری دفاع کی ٹیم کی جانب سے شیئرکی گئی ایک اور ویڈیومیں ایک اورنوجوان لڑکے کو شمالی شہر حلب کے دیہی علاقے میں اس کے گھرکے ملبےکے نیچے سے نکالا گیا ہے۔

ترکیہ اور شام میں پیر کی صبح 7.8کی شدت کا تباہ کن زلزلہ آیا تھا جس کے نتیجے میں ہزاروں افراد ہلاک اورسیکڑوں عمارتیں منہدم ہو گئی ہیں۔اس کے بعد چند گھنٹے میں 200 سے زیادہ آفٹر شاکس محسوس کیے گئے جن کے جھٹکے لبنان، مصر، قبرص، اردن، اسرائیل اور دیگر ہمسایہ ممالک میں بھی محسوس کیے گئے۔

شام اور ترکیہ میں زلزلے سے ہلاکتوں کی تعداد پانچ ہزار سے تجاوزکر گئی ہے۔امدادی ٹیمیں متاثرہ علاقوں میں وقت کے ساتھ ساتھ تباہ شدہ عمارتوں کی کھدائی جاری رکھے ہوئے ہیں۔ حکام کے مطابق آنے والے دنوں میں ہلاکتوں کی تعداد میں اضافے کا خدشہ ہے۔

شام میں طبیبان ماورائے سرحد کے سربراہ سبسٹین گئے نے بھی منگل کے روز بتایا تھا کہ ملک کے شمالی حصے میں مراکزِصحت اور اسپتال ہزاروں زخمیوں اور تشویش ناک مریضوں سے بھرے ہوئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں