جیلوں میں ہمارے قیدیوں کی اموات کا ذمہ دار اسرائیلی حکومت ہے: فلسطینی اتھارٹی

الخلیل کی جیل میں ابو علی کی موت کی عالمی تحقیقات کرائی جائیں: فلسطین، جھوٹا پروپیگنڈا کیا جارہا: تل ابیب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

جمعہ کے روز فلسطین نے اپنے اسیر احمد بدر عبد اللہ ابو علی کی موت کا ذمہ دار اسرائٍیل کو قرار دے دیا۔ فلسطینی اتھارٹی نے کہا کہ تل ابیب کی حکومت کی جانب سے طبی غفلت کی پالیسی اپنائی جارہی ہے جس کے باعث جیلوں میں فلسطینی قیدیو ں کی موت ہو جاتی ہے۔

فلسطینی وزارت خارجہ نے اپنے ایک بیان میں مغربی کنارے میں الخلیل کے جنوب میں واقع شہر یطا میں فلسطینی قیدی 48 سال کے احمد بدر عبد اللہ ابو علی کی موت کے جرم کی تحقیقات کا مطالبہ کردیا۔ فلسطینی وزارت خارجہ نے عالمی فوجداری عدالت اور انسانی حقوق کونسل کی حالیہ عالمی تحقیقاتی کمیٹی پر زور دیا کہ اپنی قانونی اور اخلاقی ذمہ داری نبھاتے ہوئے اسرائیلی جیلوں میں ہمارے قیدیوں کے ساتھ ہونے والی سلوک کی تحقیقات کریں۔

فلسطینی وزارت خارجہ نے اسرائیل پر الزام عائد کیا کہ وہ فلسطینی لوگوں کے خلاف اپنے جرائم کے ایک حصہ کے طور پر فلسطینی قیدیوں کے خلاف طبی غفلت کی پالیسی پر عمل پیرا ہے۔

دوسری جانب اسرائیلی وزارت خارجہ کے ترجمان نے ان الزامات کی تردید کردی اور اے ایف پی کو بتایا ہے کہ یہ الزم اسرائیل کے خلاف فلسطینی اتھارٹی کی جھوٹی پروپیگنڈہ مہم کا ایک حصہ ہے۔

خیال رہے اسرائیلی جیل سروس نے جمعہ کے روز ایک بیان میں تصدیق کی تھی کہ فلسطین کا ایک حفاظتی قیدی بے ہوش اور بغیر سانس لیتے پایا گیا تھا، اس کے سانس بحال کرنے کی کوشش کی گئی جو ناکام ہوگئی۔

ایک اسرائیلی عدالت نے فتح تحریک سے تعلق رکھنے والے ابو علی کو 2012 میں بیر سبع میں ایک اسرائیلی طالب علم پر چاقو کے وار کرنے والے فلسطینی کو بھرتی کرنے کا مجرم قرار دیتے ہوئے 12 سال قید کی سزا سنائی تھی۔ فلسطینی ذرائع کے مطابق ابو علی نے 10 سال سے زائد عرصہ جیل میں گزار لیا تھا اور وہ دل کی بیماری اور دیگر بیماریوں میں مبتلا تھے۔

خیال رہے اسرائیلی جیلوں میں 4700 فلسطینی قید ہیں۔ فلسطینی قیدیوں کے کلب نے کہا کہ بیمار فلسطینی قیدیوں کی تعداد 600 ہے جن میں سے 24 قیدی کینسر اور مختلف درجوں کے رسولیوں میں مبتلا ہیں۔ دریں اثنا ’’حماس‘‘ نے کہا ہے کہ قابض اسرائیل کی جیلوں میں جان بوجھ کر قیدیوں کو میڈیکل سہولیات کی فراہمی میں غفلت کا مظاہرہ کیا جاتا ہے جو ایک گھناؤنا صہیونی جرم ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں