ایران نے گذشتہ ہفتے بحیرۂ عرب میں آئل ٹینکرپرحملہ کیا تھا: نیتن یاہو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اسرائیل کے وزیر اعظم بنیامین نیتن یاہو نےاتوار کے روز کہا ہے کہ گذشتہ ہفتے ایک آئل ٹینکر پر مبیّنہ حملے کا ذمے دارایران ہے۔

لائبیریا کے پرچم بردارکیمپو اسکوائر پر حملے کی تصدیق جہاز کے کپتان نے ہفتے کے روز کی تھی اور کہا تھا کہ 10 فروری کوبحیرۂ عرب سے گزرتے ہوئے اسے ایک فضائی چیز نے ہلکا سانقصان پہنچایا تھا۔

شپنگ ڈیٹا بیس کے مطابق ٹینکرزوڈیک میری ٹائم سے منسلک ہے جسے اسرائیلی جہازراں میگنیٹ ایال عفر کنٹرول کرتاہے۔

نیتن یاہونے کابینہ کے ہفتہ واراجلاس میں کہا:’’گذشتہ ہفتے ایران نے خلیج عرب میں ایک آئل ٹینکرپرایک بارپھر حملہ کیا اور جہاز رانی کی بین الاقوامی آزادی کو نقصان پہنچایا تھا‘‘۔

علاقائی دفاعی اور سکیورٹی ذرائع کا بھی کہنا ہے کہ انھیں شُبہ ہے کہ یہ حملہ ایران نے کیا تھا۔تاہم ایران نے اس واقعہ پرکوئی تبصرہ نہیں کیا۔وہ ان الزامات کومستردکرتا چلا آرہاہے کہ گذشتہ چند سال کے دوران میں اسی طرح کے حملوں میں اس کا ہاتھ کارفرما ہے۔

برطانوی میری ٹائم سکیورٹی کمپنی امبری انٹیلی جنس کا کہنا ہے کہ ماضی میں بغیرپائلٹ کے فضائی نظام نے بحیرۂ عرب میں دو ٹینکروں اورایک بڑے بحری جہاز پر حملہ کیا تھااور اندازہ لگایا کہ تہران نے یہ حملہ کیا تھا۔حملے کی زد میں آنے والے ان میں سے دو تجارتی جہاز اسرائیل کے ملکیتی تھے اور ایک متحدہ عرب امارات کا ملکیتی تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں