کیا بن گویر ٹوئٹر کو فلسطینیوں کے خلاف "جنگی پلیٹ فارم" کے طور پراستعمال کرتے ہیں؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

روزانہ کی بنیاد پر اسرائیلی وزیر برائے قومی سلامتی ایتمار بن گویر سماجی رابطوں کے پلیٹ فارم "ٹویٹر" کا استعمال کرتے ہوئے ویب سائٹ کے تشدد مخالف قوانین کو خاطر میں لائے بغیر فلسطینیوں کے محاصرے اور ہراساں کیے جانے کا اظہار کرتے ہوئے اپنے فیصلوں کو ٹویٹ کرتے ہیں۔

بن گویر اصل میں ایک وکیل ہیں اور اسرائیل میں ایک انتہائی دائیں بازو کے سیاست دان اور "یہودی پاور" پارٹی کے رہنما ہیں۔ وہ 2021 میں پہلی بار کنیسٹ کے لیے منتخب ہوئے تھے، جب کہ انھوں نے آخری بار اپنا پہلا وزارتی قلمدان 2022 میں بنجمن نیتن یاہو کی حکومت سنھبالا جس میں وہ قومی سلامتی کے وزیر کے عہدے پر فائز ہیں۔

ٹویٹر کی پالیسیوں پر فیصلہ کریں

بن گویر اپنے ٹویٹر پیج کو خود ہی چلاتے ہیں اور اپنے تکنیکی دفتر کو اس کا انتظام کرنے کی اجازت نہیں دیتے۔ وہ اس پر متنوع مواد کے ساتھ ٹویٹ کرتے ہیں۔

ان ٹویٹس میں حکومت کے فیصلوں کے اور اپنے عہدے کے دائرہ کار میں آنے والی تفصیلات شیئر کرتے ہیں۔ وہ اس پر دھمکیاں دیتے ہیں۔ وہ اپنی زبان اور عمل دونوں سے آئے روز فلسطینیوں کو نشانہ بنا رہے ہیں۔

اس پلیٹ فارم کے ذریعے بن گویر نے اسرائیلی حکومت سے غزہ میں بڑے پیمانے پر آپریشن کرنے کا مطالبہ کیا اور ساتھ ہی اپنی ٹویٹ میں پٹی سے داغے جانے والے راکٹوں کا جواب دینے کی پالیسی بھی بتائی جس کے مطابق ہر غزہ سے داغے گئے ایک گلے پر جوابا پچاس میزائل داغے جائیں۔ ان حملوں میں حماس کی فوجی تنصیبات کو نشانہ بنانے کا مطالبہ کیا جاتا ہے۔

ایک ٹویٹ میں بن گویر نے لکھا کہ "غزہ سے راکٹ فائر کرنے سے وہ قیدیوں کےبارے میں فیصلوں سےباز نہیں آسکتے۔ یہ کہ وہ پٹی کے خلاف شدید حملے کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں۔"

انہوں نے اپنی ٹویٹ کے ذریعے انکشاف کیا کہ "کنیسیٹ نے اپنے ملک کے خلاف حملوں کے کسی بھی مرتکب کی شہریت منسوخ کرنے کے بعد عرب اسرائیلی قیدیوں کو غزہ سے نکالنے پر اتفاق کیا ہے۔"

بن گویر کی ٹویٹس صرف غزہ تک ہی محدود نہیں ہوتیں بلکہ اس میں فلسطینیوں کو ان کے وجود کے تمام شعبوں میں شامل کیا جاتا ہے۔ ایک اور ٹویٹ میں حکومتی فیصلوں کے بارے میں انہوں نے لکھا کہ میں نے نفحہ جیل میں ایک بیکری کو بند کر دیا جو فلسطینی قیدیوں کے لیے تازہ روٹی تیار کر رہی تھی۔ یہ میری ہدایت پر ہوا۔

انہوں نے لکھا کہ میں نے پولیس کو حکم دیا ہے کہ وہ فلسطین لبریشن آرگنائزیشن [پی ایل او] کے کسی بھی جھنڈے کو میدان میں اٹھانے سے منع کرے اور اسرائیل کی ریاست کے خلاف کسی بھی قسم کی اشتعال انگیزی بند کرائے۔ اسرائیلی کابینہ سے الخان الاحمر کو فوری طور پر خالی کرنے کا اپنا مطالبہ بھی ٹویٹ کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں