تصاویر : لگژری ہوٹل چین "فور سیزنز" کا سعودی عرب بحیرہ احمر میں ریزورٹ بنانے کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

لگژری ہوٹل چین فور سیزنز نے منگل کو سعودی عرب میں بحیرہ احمر پر 149 کمروں پر مشتمل ریزورٹ بنانے کے منصوبے کا اعلان کیا۔

مکمل طور پر آراستہ ریزورٹ شوری جزیرے پر واقع ہوگا اور اس میں وسیع گولف کورس اور یاٹ مرینا جیسی اضافی سہولیات موجود ہوں گی۔

اس میں چھ ریستوراں، میٹنگ اور ایونٹ کے مقامات، سمندری دریافت کا مرکز، بچوں کے لیے موزوں علاقہ اور بہت کچھ بھی ہوگا۔

حمام کے ساتھ ایک سپا، ٹینس کورٹ، تین آؤٹ ڈور پول، اور خاندانوں اور بالغوں کے لیے دو الگ الگ ساحل بھی سہولیات کی وسیع فہرست میں شامل ہیں۔

ریڈ سی گلوبل ایک مشترکہ اسٹاک کمپنی ہے جو مکمل طور پر سعودی پبلک انویسٹمنٹ فنڈ کی ملکیت ہے۔ یہ کمپنی بحیرہ احمر کے علاقے کو پائیدار ترقی دے کر اپنی معیشت کو متنوع بنانے کے لیے سعودی عرب کے وژن 2030 کا سنگ بنیاد ہے۔

ریڈ سی گلوبل کے سی ای او جان پگانو نے ایک بیان میں کہا کہ"یہ منصوبہ سعودی عرب کو اپنی تاریخی اور ثقافتی اہمیت کو اجاگر کرتے ہوئے خطے کی غیر معمولی قدرتی خوبصورتی پیش کرنے کا موقع فراہم کرے گا۔''

انہوں نے کہا کہ "بحیرہ احمر ان لوگوں کے لیے مثالی منزل ہو گا جو سعودی عرب کی قدیم سلطنت کے عجائبات سے پردہ اٹھانا چاہتے ہیں، جن میں مدین صالح کے کھنڈرات کی قربت کے ساتھ ساتھ قدرتی پرکشش مقامات جیسے ماحولیاتی طور پر محفوظ مرجان کی چٹانیں ، مینگرووز، غیر فعال آتش فشاں، مقامی جنگلی حیات اور بہت کچھ شامل ہیں۔

بحیرہ احمر پراجیکٹ سعودی عرب کے مغربی ساحل کے ساتھ ایک سیاحتی مقام ہے۔ یہ 2017 میں سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے اعلان کردہ تین گیگا منصوبوں میں سے ایک ہے۔

اسے ایک پرتعیش سیاحتی مقام کے طور پر ڈیزائن کیا گیا ہے جو فطرت اور ثقافت کو قائم رکھتے ہوئے ایڈونچر اور پائیدار ترقی میں نئے معیارات کو اپنائے گا۔

یہ منصوبہ سعودی عرب کے بحیرہ احمر کے ساحل پر 28,000 مربع کلومیٹر پر پھیلا ہوا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں