’میرے بچوں کا خیال رکھنا‘ لبنان میں خود کشی کرنے والے نوجوان کا آخری پیغام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

"میں تھک چکا اور اپنے آپ سے بیزار ہوں۔ دعا، جواد اور جوری تمہارے پاس میری امانت ہیں۔ سب سے اہم چیز جوری ہے. میں مزید برداشت نہیں کر سکتا"۔ یہ درد بھرے الفاظ ایک لبنانی نوجوان کے ہیں جس نے بے روزگاری اور معاشی حالات سے تنگ آکر خود کشی کرنے سے قبل اپنے ایک دوست کو اپنے آخری پیغام میں لکھے تھے۔

خود کو گولی مارکراپنی زندگی ختم کرنے والے موسیٰ الشامی نامی نوجوان نے پورے ملک کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔

چاولوں کی پیداوار کے لیے مشہورملک لبنان کے معاشی حالات نے نوجوان کو اپنی زندگی ختم کرنے پرمجبور کردیا۔ اس کے پاس اپنی اور اپنے بچوں کی زندگی بچانے اور ان کا پیٹ بھرنے کے لیے کوئی راستہ نہیں بچا تھا۔ آخر کار اس نے ایک آڈیو پیغام ریکارڈ کرکے دوست کو بھیجا اور خود پستول سے اپنی ہی جان لے لی۔

لاش کہاں سے ملی؟

اپنے آخری الفاظ میں نوجوان اس بات کی تصدیق کرتا ہے کہ وہ اپنی زندگی سے مایوسی کے اس مقام پر پہنچ گیا ہے۔ یہاں تک کہ جرجوع گاؤں کےنواحی علاقے دیر الزہرانی کے رہائشی موسیٰ کی لاش اس کے گھر کے باہر سےملی۔ خود کشی کے لیے استعمال ہونے والا پستول بھی لاش کے پاس تھا۔

سوشل میڈیا سے اس واقعے کی ملنے والی معلومات نے اس بات کی تصدیق کی کہ نوجوان نے خودکشی کی اور خود کشی کی وجہ معاشی بحران ہے جس نے پورے ملک کو لپیٹ میں لے رکھا ہے۔

ایک مقامی سماجی تنظیم کے مطابق خود کشی کرنے والے نوان نے اپنے بچوں کی دیکھ بھال کرنے کے لیے اپنے دوست کوپیغام بھیجا۔ پیغام میں اس نے کہا ہے کہ وہ اپنے بچوں کے لیے رزق کا انتظام نہیں کرسکتا۔

’میرے بچوں کا خیال رکھنا‘

نوجوان اپنے دوست سے روتے ہوئے اداس آواز میں اپنے بچوں کا خیال رکھنے کی التجا کرتا اور کہتا ہے: "میری نظرمیں آپ کے علاوہ اور کوئی ایسا نہیں جو میرے بچوں کا خیال رکھے۔ آپ بڑے دل والے ہیں مگرمیں حالات سے تنگ آکر اپنے گھرکے باہر خود کشی کرلوں گا۔ پرسکون ہو جاؤ۔ میرے بچوں دعا، جواد اور جوری کا خیال رکھنا۔ یہ تمہارے پاس میری امانت ہیں۔"

اس نے مزید کہا کہ "مجھے معاف کر دو، میں نے تمہیں کبھی تکلیف نہیں پہنچائی اور خدا گواہ ہے۔ موسیٰ سے کہو کہ تمہارا باپ تم سے بہت محبت کرتا ہے لیکن اب وہ برداشت نہیں کر سکتا۔ میں تھک گیا ہوں، مجھے معاف کر دو اور سب مجھے معاف کر دیں اور کسی کو میرے بارے میں برا نہ کہنے دو۔"

اس نے مزید کہا کہ "دعا، جواد اور جوری آپ کےپاس امانت ہیں۔ سب سے اہم چیز جوری ہے، لیکن میں مزید برداشت نہیں کر سکتا۔ میں تھک گیا ہوں اور بیزار ہوں۔"

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں