عمرہ کے لیے آئے عراقی کو فالج اٹیک، بیوی کا سعودی طبی عملے کو خراج تحسین

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر ایک عراقی خاتون معتمر کی ویڈیو سے گردش کر رہی ہے۔ ویڈیو میں عراقی خاتون نے بتایا کہ کیسے اس کے شوہر کو فالج کا اٹیک ہوا اور سعودی طبی حکام نے اس کو بہترین خدمات فراہم کرکے بڑے نقصان سے بچانے میں کردار ادا کیا۔

عمرہ کے لیے آئی عراقی خاتون نے بتایا کہ اس کے شوہر کو بس میں فالج کا حملہ ہوا اور اسے حائل کے ایک ہسپتال لے جایا گیا جہاں اسے ضروری طبی امداد فراہم کی گئی۔ انہوں نے سعودی عرب اور عظیم انسانی امداد کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا "انہوں نے ہمیں ناکام نہیں کیا۔"۔ واضح رہے کہ یہ کیس ان ایمرجنسی کیسز میں سے ایک ہے جو ہسپتالوں میں 24 گھنٹے موصول ہوتے ہیں جہاں مریض کی دیکھ بھال اور تمام طبی خدمات فراہم کی جاتی تھیں۔

یہ امر قابل ذکر ہے کہ سعودی وزارت حج و عمرہ نے تمام قسم کے ویزے رکھنے والوں اور دنیا کے تمام ممالک سے سیاحت کے مقصد سے آنے والوں اور سعودی عرب میں قیام کرنے واوں کو عمرہ ادا کرنے کی اجازت دے دی ہے ۔ وہ لوگ بھی سعودی عرب میں آ رہے ہیں جنہوں نے ریاستہائے متحدہ امریکہ، برطانیہ اور 27 شینگن ممالک سے ویزے حاصل کیے ہیں۔

معتمرین کو طبی سہولیات کی فراہمی ان کوششوں کے فریم ورک کے تحت ہیں جن میں عازمین کی آمد کے طریقہ کار کو آسان بنانے، عمرہ کی رسومات ادا کرنے میں سہولیات فراہم کرنے اور تمام خدمات کو اعلیٰ معیار کے ساتھ فراہم کرنے کا عزم کیا گیا ہے۔ یہ سب سعودی عرب کے ’’ ویژن 2030 ‘‘ کے پروگراموں کا ایک حصہ ہے ۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں