فرانس کی فلسطینی گاؤں کا وجود مٹانے کے اسرائیلی بیان کی شدید مذمت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

فرانس نے اسرائیلی حکام کی طرف سے غرب اردن کے علاقے حوارہ کو مکمل طور پر صفحہ ہستی سے مٹانے کے نفرت انگیز بیان کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

فرانسیسی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں کہا ہےکہ اسرائیلی وزراء کی جانب سے حوارہ گاؤں کا وجود مٹانے کے مذموم بیانات اور دھمکیاں ناقابل قبول اور غیر ذمہ دارانہ ہیں۔

فرانسیسی وزارت خارجہ کی ترجمان این کلیئر لوگینڈر نے جمعہ کے روز ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ ان تبصروں سے "نفرت اور موجودہ کشیدگی" میں اضافہ ہوگا۔

اس سے قبل خلیج تعاون کونسل کے سیکرٹری جنرل جاسم محمد البدیوی نے اسرائیلی حکام کے ان بیانات کی مذمت کی تھی اور انہیں نسل پرستانہ اور غیر ذمہ دارانہ قرار دیا تھا۔

خیال رہے کہ اسرائیلی وزیر خزانہ بسیلیل سموٹریچ نے فلسطینی گاؤں حوارہ کو صفحہ ہستی سے مٹانے کی دھمکی دی تھی۔

بسیلیل کے اس دھمکی آمیز بیان کے بعد عرب ممالک اور عالمی سطح پر اس بیان کی شدید مذمت کی جاری ہے۔ قبل ازیں سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، برطانیہ اور کئی دوسرے ممالک نے اسرائیلی وزیر کے حوارہ گاؤں سے متعلق بیان کی شدید مذمت کی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں