مسجد حرام و مسجد نبوی کے قرآنی حلقوں میں 130 مرد و خواتین اساتذہ خدمات انجام دے رہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

جامع مسجد اور مسجد نبوی کے امور کی صدارت عامہ، جس کی نمائندگی ایجنسی برائے رشد و ہدایت کر رہی ہے ، نے دو مقدس ترین مساجد میں متعدد قرآنی حلقوں کو مختص کرنے کا اعلان کردیا۔ ان حلقوں میں 130 سے زیادہ مرد اور خواتین اساتذہ قرآٰن کریم کی تعلیم دے رہے ہیں۔

’’جنرل پریذیڈنسی برائے دو مقدس ترین مساجد‘‘ نے کہا کہ قرآنی حلقے ان پروگراموں کے ضمن میں آتے ہیں جو خدا کے مقدس گھر کی زیارت کرنے والوں کی رہنمائی کرتے ہیں۔ ان پروگراموں میں اللہ تعالی کی کتاب کی تلاوت اور اس کی تفسیر کی تعلیم دی جاتی ہے۔ ان حلقوں میں قرآن مجید کی ادائیگی کی تصحیح بھی کی جاتی ہے۔

صدارت عامہ نے بتایا کہ ’’مقرأة الحرمين الشريفين‘‘ یعنی حرمین شریفین کی درسگاہ کا تعلق جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کرتے ہوئے قرآن پاک کی تعلیم دینے سے ہے۔ یہ پروگرام مقدس مسجد کے اندر سے حفظ کرنے والوں اور ان کی تلاوت کو نشر کرتا ہے تاکہ دور سے قرآن مجید سیکھنے کے خواہاں لاکھوں مسلمان بھی اس پروگرام سے فائدہ اٹھا سکیں۔

دو مقدس مساجد کے امور کی صدارت عامہ نے نابینا افراد کے لیے بریل قرآن کی ایک بڑی تعداد مختص کرنے اور قرآن مجید کے الفاظ کے معانی کو متعدد زبانوں میں ترجمہ کرنے کی خدمات کے متعلق بھی بتایا۔ بیان میں کہا گیا کہ انگریزی، اردو، انڈونیشین اور دیگر زبانوں میں قرآن مجید کے متن، ترجمے اور آسان تشریح کے نسخے المسجد الحرام کے تمام اہم مقامات اور کوریڈورز میں رکھے گئے ہیں۔

مقامات مقدسہ کے داخلی اور خارجی راستوں پر بے شمار نسخے نیک لوگوں میں تقسیم کیے جاتے ہیں۔ اللہ ان افراد کی بہتر اجر دے گا جو المسجد الحرام میں کے اندر 17 مقامات پر درس دے رہے۔ اسی طرح 23 مقامات پر مفت فون بوتھ اور 5 فون کے ذریعے پوچھنے والوں کے سوالات کے جوابات دیے جارہے ہیں۔ ان خدمات پر چوبیس گھنٹے 70 اہم افراد خدمات انجام دے رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں