سعودی عرب میں بچوں کے ادب کے لیے پہلی کانفرنس اپنے مقاصد کے لیے پُرامید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے مشرقی علاقے میں کتاب میلہ 2023ء ادب، اشاعت اور ترجمہ کمیشن کے زیر اہتمام کنگ عبدالعزیز سینٹر فار ورلڈ کلچر "اثرا" کے ساتھ بچوں کے ادب کے میدان میں مہارت رکھنے والے ماہرین کی موجودگی میں کل بدھ کو مملکت پہلی بچوں کی ادبی کانفرنس کا آغاز ہوا۔ اس کانفرنس کےانعقاد کا مقصد بچوں کے زمرے کے ادبی لٹریچر پر روشنی ڈالنا ہے۔ کانفرنس کےشرکاء اورماہرین نے ڈیجیٹل نظام کے غلبے کے باوجود ہدف اور زبان کے لحاظ سے اس مواد کی اہمیت پر زور دیا۔

بچپن کی تبدیلی

کانفرنس کے افتتاحی اجلاس سے خطاب میں ورلڈ کلچرل سینٹر’اثرا‘ کے پروگرامز ڈائریکٹر نورہ الزمل نے بچوں کے لیے مرکزمیں چلڈرن میوزیم کی جانب سے پیش کی جانے والی سرگرمیوں کا جائزہ پیش کیا۔

انہوں نے چلڈرن لٹریچر کےانضمام کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ بچوں کا ادب متوازی رفتار سے ثقافت کی ترقی میں حصہ ڈالتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ "بچوں کا ادب شاید سب سے زیادہ دلچسپ اور رنگین ادبی مطالعات میں سے ایک ہے۔ اس کے متن ناول سے لے کرتصویری کہانیوں تک اور زبانی شکلوں سے ملٹی میڈیا تک ایک بہت بڑا چیلنج ہے۔

یہ کانفرنس بچوں کے ادب کو اس کی تمام شکلوں اور انواع میں مدد دینے میں "اثرا" کے اہم کردار کے تسلسل کے طور پر سامنے آئی ہے، جس کا آغاز مملکت میں بچوں کے لیے پہلے نجی عجائب گھر کے قیام سے ہوا۔ اس کے نتیجے میں بچوں کی پہلی کتابی نمائش کا قیام عمل میں آیا۔ نورہ الزمل کے مطابق بچوں کے ادب میں اثرا سینٹر 20 سے زیادہ ممتاز مقامی، عرب اور بین الاقوامی پبلشنگ ہاؤسز کی میزبانی کر رہا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں