مغربی کنارے میں اسرائیلی آباد کار نے مشتبہ فلسطینی بندوق بردار کو شہید کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلسطین میں ایک اسرائیلی آباد کار نے جمعے کے روز مقبوضہ مغربی کنارے میں ایک مبینہ فلسطینی حملہ آور کو ہلاک کر دیا۔

اسرائیلی فوج نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ "چاقوؤں اور دھماکہ خیز آلات سے لیس ایک دہشت گرد (یہودی) بستی دوروت ایلیت کے علاقے میں پہنچا جسے حملہ کرنے سے پہلے ایک آباد کار نے گولی مار دی۔

فلسطینی وزارت صحت نے تصدیق کی ہے کہ ایک یہودی آباد کار نے 21 سالہ عبدالکریم الشیخ کو فلسطینی علاقے قلقیلیہ میں دوروت ایلیت کے قریب قتل کیا ہے۔

اس واقعے سے چند گھنٹے پہلے ایک اور واقعے میں حماس کے مسلح ونگ کے ایک رکن نے تل ابیب میں ایک کیفے پر فائرنگ کی جس سے تین افراد زخمی ہو گئے۔ حملہ آور کو پولیس نے گولی مار کر ہلاک کردیا۔

اسرائیلی وزیر دفاع یوو گیلنٹ نے کہا کہ انہوں نے مغربی کنارے کے شہر رام اللہ کے قریب نیلن میں حملہ آور کے گھر کو فوری طور پر تباہ کرنے کا حکم دیا ہے۔

فوج نے بتایا کہ رات بھر اسرائیلی فوج، شن بیٹ کی داخلی سیکورٹی سروس اور سرحدی پولیس حملہ آور کے گھر پر موجود رہی۔ فوج کے مطابق اس آپریشن کے دوران، حملہ آور کے خاندان کے دو افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔ جمعرات کی صبح شمالی مغربی کنارے میں اسرائیلی فوج کی کارروائی میں تین فلسطینی ہلاک ہو گئے۔

سال کے آغاز سے لے کر اب تک اسرائیل-فلسطینی تنازعہ میں عسکریت پسندوں اور شہریوں سمیت 77 فلسطینی بالغ اور بچوں کی جانیں جا چکی ہیں۔

دونوں اطراف کے سرکاری ذرائع پر مبنی اے ایف پی کے اعداد وشمار کے مطابق، اسی عرصے کے دوران بارہ اسرائیلی شہری، جن میں تین بچے اور ایک پولیس اہلکار اور ایک یوکرینی شہری ہلاک ہو چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں