" یا رب اسے بچا لے " سعودی شہری نے پانی میں پھنسی گاڑی سے غیر ملکی کو نکال لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

"یا رب اسے بچا لے " اس جملے کے ساتھ سعودی باشندہ غیر ملکی کو بچانے کے لیے دوڑ پڑا تھا۔ غیر ملکی کی گاڑی طوفانی بارش میں پھنس گئی تھی اور بہترین اخلاق اور اعلی سیرت کا مظاہرہ کرتے ہوئے سعودی شہری نےآگے بڑھ کر اس غیر ملکی کو موت کے منہ میں جانے سے بچا لیا۔

سوشل میڈیا پر گردش کرنے والے ویڈیو کلپ میں دیکھا جا سکتا ہے کہ سعودی عرب کے جنوبی شہر ’’بیش‘‘ میں ریسکیو آپریشن کے اہم لمحات کو دکھایا گیا۔ ویڈیو میں نظر آ رہا ہے کہ ایشیائی تارکین وطن کی کار کے اطراف پانی موجود ہے ۔ ایسے میں غیر ملکی شہری گاڑی سے چھلانگ لگاتے ہوئے سمندری پانیوں میں تیراکی شروع کردیتا ہے۔ اس کے بعد سعودی نوجوان رسی پھینکنے کے لیے دوڑ پڑے اور پھر رسی پھینک دی جسے ڈوبنے والے شہری نے پکڑ لیا۔

ان نوجوانوں نے مصیبت میں پھنسے اس نوجوان کو حفاظت کے کنارے تک دھکیل دیا۔ اس موقع پر موت کے قریب جا کر بچ جانے والے غیر ملکی نے بڑی خوشی کا اظہار کیا۔ سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر کام کرنے والوں نے ان جوانوں کی جانب سے مکینوں کو طوفانی بارشوں سے بچانے کے لیے کیے گئے بہادری کے کام کو سراہا۔ محقق اور ماہر موسمیات معاذ الاحمدی نے ’’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘‘ کو بتایا ہے کہ سعودی عرب کے مختلف علاقں میں فضائی دباؤ مزید گہرا ہو گیا ہے۔

ماحولیاتی عدم استحکام

معاذ الاحمدی نے اپنے انٹرویو میں کئی عوامل کی بات کی ۔ معاذ کے مطابق یہ وہ عوامل جو عدم استحکام اور شدید ہنگامہ آرائی کا باعث بنا ہے۔ تھرمل اور بڑے کنویکشن کے درمیان فرق کو بھی سمجھا جانا چاہیے۔ معاذ نے عمودی رفتار کی موجودگی کی طرف بھی اشارہ کیا جو مملکت کے بڑے علاقوں میں اوپر کی طرف دھاروں کی رفتار ہے۔ بیش ، الجوف، حفر الباطن، حائل، مدینہ منورہ ، مکہ مکرمہ ، القصیم، ریاض، الشرقیہ، جنوبی ابہا، الباحہ اور جازان کے علاقوں میں شدید طوفانی بارشیں ہوئیں۔

سعودی سول ڈیفنس نے اپنی ٹویٹ میں کہا ہے کہ وہ مملکت کے کچھ علاقوں میں موسمی حالات پر نظر رکھے ہوئے ہیں۔ انہوں نے ہدایات پر عمل کرنے اور طوفان کے بہاؤ کے دوران خطرناک مقامات سے دور رہنے کا مطالبہ کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں