’’ڈیوٹی کے شہدا‘‘کے لیے سعودی صدقہ جاریہ پروگرام کے تحت راشن کی تقسیم

رمضان المبارک کے دوران کھانے پینے کی اشیاء کی 7500 ٹوکریاں تقسیم کی جا رہی ہیں: وزارت داخلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب میں ’’مملکت اپنے بچوں کو نہیں بھولتی‘‘ کےتصور کی ایک عملی صورت پر عمل کرتے ہوئے سعودی وزارت داخلہ نے دوران ’’ڈیوٹی کے شہدا‘‘ کے پروگرام پر عمل شروع کردیا۔ سعودی عرب میں رمضان کے بابرک مہینے میں خیراتی کاموں کے پراجیکٹس شروع کئے گئے ہیں۔ انہیں پراجیکٹس میں وطن کی خاطر جانوں کا نذرانہ پیش کرنے والوں کے نام پر محتاج اور ضرورت مندوں کو راشن تقسیم کرنے کا ایک شاندار سلسلہ بھی شامل ہے۔
ہر سال کے رواج کی طرح وزیر داخلہ شہزادہ عبدالعزیز بن سعود بن نایف نے رمضان المبارک کے بابرکت مہینے میں ’’ڈیوٹی کے شہداء‘‘ کے لیے صدقہ جاریہ کی روایت برقرار رکھنے کی ہدایت کی ہے۔ اس پروگرام کا مقصد شہدا کی یاد کو قائم رکھنا اور وطن کے لیے ان کے قرض کی واپسی کا احساس پیدا کرنا ہے۔
اسی تناظر میں وزارت داخلہ کی ایجنسی برائے عسکری امور کا آغاز کیا گیا تھا۔ جنرل ایڈمنسٹریشن برائے بہبود شہداء اور زخمیوں کے اہل خانہ کی جانب سے سعودی عرب کے مختلف علاقوں، شہروں، دیہاتوں اور صحرا میں ڈیوٹی کے شہداء کے لیے صدقہ کے طور پر 7500 ٹوکریاں کھانے پینے کی اشیاء ماہ مقدس میں تقسیم کی جارہی ہیں۔
یہ اقدام کئی دہائیوں سے شہداء کی وطن کے لیے دی گئی قربانیوں اور ایثار کی شکرگزاری میں وزارت داخلہ نے جاری کر رکھا ہے۔ وزارت شہداء کے خاندانوں پر خصوصی توجہ دیتی ہے تاکہ ان کی زندگی کے مختلف تقاضوں میں ان کی مدد کی جا سکے۔

مقبول خبریں اہم خبریں