اردن کا قومی پکوان ''منسف" جو دستر خوان رمضان کا لازمی جزو سمجھا جاتا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

اردن میں رمضان کے پہلے دن افطار کے وقت تقریبا ہر دستر خوان پر یہاں کا مرغوب پکوان "منسف" موجود ہوتا ہے۔ یہ اردن کا تاریخی اور قدیم ترین کھانا ہے۔ اگرچہ کئی دیگر عرب ممالک میں اسے شوق سے کھایا جاتا ہے لیکن اردن میں بطور خاص اس کا اہتمام ہر گھر ہر تقریب میں ہوتا ہے۔

روایتی طور پر رمضان کے مقدس مہینے کے آغاز کے لیے، شادی بیاہ اور دیگر تقریبات پر لوگ اس "سفید" ڈش کو کھانے کے لیے جمع ہونا پسند کرتے ہیں۔

منسف، جسے حال ہی میں اردن میں یونیسکو کے ثقافتی ورثے میں شامل کیا گیا ہے، اردن کا پہلا عالمی سطح پر مقبول ترین پکوان بن گیا ہے۔

"سفید رنگ سے ابتدا"

اردن میں رمضان المبارک کے پہلے دن افطار پر اس کا اہتمام کیوں لازمی ہے؟

اس بارے میں بات کرتے ہوئے اردن کی شہری تمارا نے کہا کہ یہاں اس مقدس مہینے کا آغاز "سفیدی" سے کرنے کی روایت ہے۔ اس سے مراد سفید دودھ کے ساتھ پکائی جانے والی ڈش ہے جو دراصل ایک خوبصورت علامت ہے کہ ہم رمضان کو سفیدی اور پاکیزگی کے ساتھ شروع کر رہے ہیں۔ اس مقصد کے لیے منسف ڈش کواس لیے اپنایا جاتا ہے، کیونکہ یہ اردن کی مقبول ترین ڈش ہے۔


انہوں نے بتایا کہ منسف کا لذیذ ذائقہ ہر عمر کے لوگوں کو بھاتا ہے، اور افطار کے لیے خاص طور پر اس کا انتظار کیا جاتا ہے۔

منسف کیا ہے؟

منسف کو اردن میں سخاوت کی علامت سمجھا جاتا ہے۔ اسے شادیوں اور جنازوں میں بھی پیش کیا جاتا ہے۔ اس کی تیاری کے لیے چاول ، بھیڑ کے گوشت کے علاوہ گاڑھے خشک کیے گئے دودھ کا استعمال ہوتا ہے جسے "جمید " کہتے ہیں

جمید دودھ کو دہی یا لسی میں تبدیل کرنے کے بعد اس سے بنایا جاتا ہے، اور پھر اس دودھ کو خاص برتنوں میں پھینٹا جاتا ہے، تاکہ مکھن الگ ہو جائے، مکھن نکلا ہوا دودھ مخیض یا شنینہ کہلاتا ہے۔

اس کے بعد شنینہ کو ہلائے بغیر آگ پر گاڑھا ہونے تک گرم کیا جاتا ہے یہاں تک کہ وہ پنیر کی شکل کا ہو جائے، پھر اسے چھلنی میں کم از کم ایک دن کے لیے رکھا جاتا ہے تاکہ اس میں موجود اضافی پانی نکل جائے، اور آخر میں تھوڑا سا اس میں نمک ملا کر گولے بنا کر دھوپ میں خشک کیا جاتا ہے۔

اگلا مرحلہ اس دودھ کے شوربے میں گوشت کو پکانا اور چاول کی تیاری ہوتا ہے۔ اسے مختلف علاقوں میں مختلف تراکیب سے بھی بنایا جاتا ہے۔

جنوبی اردن میں الکرک گورنری کو جمید کی صنعت میں بہترین مانا جاتا ہے اور یہاں کا بہترین قسم کا جمید "جمید کرکی" کہلاتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں