شام میں اسرائیلی حملے میں سپاہِ پاسداران انقلاب کاایک اورمشیرہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شام میں فوجی مشیرکی حیثیت سے خدمات انجام دینے والا ایران کی سپاہِ پاسداران انقلاب کا دوسرارکن دمشق کے قریب اسرائیلی فضائی حملے میں ہلاک ہوگیا ہے۔

سپاہِ پاسداران انقلاب نے اتوارکے روزایک بیان میں کہا ہے کہ پاسداران انقلاب کے ایک رکن مقدادمہغانی جعفرآبادی جمعہ کے روزصہیونی حکومت کے مجرمانہ حملے میں زخمی ہوگئے تھےاوروہ زخموں کی تاب نہ لاکر چل بسے ہیں۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ صہیونی حکومت کے جرائم کو بلاجواب نہیں رہنے دیا جائے گا اور اس کوبھاری قیمت چکانا پڑے گی۔

اسرائیل گذشتہ کئی سال سے شام میں ایران سے وابستہ اہداف پر حملے کرتا رہا ہے۔شام میں 2011 میں خانہ جنگی کےآغاز کے بعد سے صدربشارالاسد کی حمایت میں ایران نے اپنے اثرورسوخ میں اضافہ کیا ہے اوراس کے فوجی مشیر اور آلہ کارمسلح ملیشیائیں بشارالاسد کی حمایت میں لڑرہی ہیں۔

ایران کا کہنا ہے کہ اس کے فوجی افسردمشق کی دعوت پر شام میں مشاورتی کردار ادا کر رہے ہیں۔ شام میں جنگ کے دوران میں اب تک پاسداران انقلاب کے درجنوں ارکان ہلاک ہو چکے ہیں۔ان میں بعض سینیرافسربھی شامل ہیں۔

برطانیہ میں قائم شامی رصدگاہ برائے انسانی حقوق کے مطابق جمعہ کو شام میں اسرائیل نے چھٹا فضائی حملہ کیا تھا جس میں پاسداران انقلاب کا ایک اور افسر اور فوجی مشیر میلاد حیدری بھی ہلاک ہو گیا تھا۔

ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان ناصرکنعانی نے پاسداران انقلاب کے دو ارکان کی ہلاکت پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ایران اسرائیل کی ریاستی دہشت گردی کا مناسب وقت اور جگہ پر جواب دینے کا حق محفوظ رکھتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں