مصر: مساجد میں تعزیتی تقریبات اور نکاح کی سرگرمیوں پرپابندی عاید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصرکی وزارت مذہبی امور نے ملک بھر کی مساجد کے لیے ایک نیا ضابطہ اخلاق جاری کیا ہے۔ اس نوٹیفکیشن میں ملک بھرکی مساجد میں تعزیتی سرگرمیوں اور نکاح کی تقریبات پر پابندی عاید کردی ہے۔

مصری وزیر اوقاف محمد مختار جمعہ نے ملک بھر میں مساجد کے اندر تعزیتی اور شادی کی تقریبات کے انعقاد پر پابندی کا اعلان کیا۔

مصری وزیر اوقاف محمد مختارجمعہ نے عطیہ خانوں کےحوالے سے حمتی فیصلہ کیا گیا ہے۔ مساجد میں الگ سے چندہ بکس رکھنے کی اجازت نہیں ہوگی۔ اس کے مساجد کے ہال، ان کے صحن اور مسجد کا حصہ سمجھے جانے والے مقامات میں کسی قسم کی تعزیتی سرگرمی یا نکاح کی تقریبات کی اجازت نہیں ہوگی۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ اس اقدام کا مقصد مساجد کے تقدس کو برقرار رکھنا ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ وزیر اوقاف نے ریجنل ڈائریکٹوریٹ کے ڈائریکٹرز پر مشتمل اہم اجلاس منعقد کیا۔ اجلاس میں واضح کیا گیا ہے کہ مساجد میں صرف مجاز سرگرمیوں کے لیے فنڈز جمع کرنے کی اجازت ہوگی۔ مساجد کی انتظامیہ کو نوٹس جاری کیے گئے ہیں جن میں انہیں مساجد کے حوالے سے نئے ضابطہ اخلاق پرپابندی کی تاکید کی گئی ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ مساجد میں غیر مجاز سرگرمیوں کے حوالے سے لاپرواہی برتنے یا ممنوع سرگرمیوں کی اجازت دینے والے منتظمین کے خلاف سخت تادیبی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں