مغربی کنارا: نابلس میں اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے دو فلسطینی شہید

رواں سال قابض اسرائیلی فورسز 86 فلسطینیوں کو شہید کیا، مزاحمتی کارروائیوں میں 13 اسرائیلی ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلسطینی وزارت صحت نے بتایا ہے کہ پیر کے روز مغربی کنارے کے شہر نابلس میں اسرائیلی فوج کے ساتھ جھڑپوں میں دو فلسطینی شہید ہوگئے ہیں۔ فلسطینی خبر ایجنسی کے مطابق ایک نوجوان موقع پر شہادت پا گیا اور دوسرا شدید زخمی ہوا، بعد میں وہ بھی دم توڑ گیا۔

نابلس میں ہلال احمر میں ایمبولینس و ایمرجنسی کے ڈائریکٹر احمد جبریل نے واضح کیا کہ قابض فوج نے نابلس کے خصوصی ہسپتال پر زہریلی گیس کے بموں سے حملہ کردیا۔

سکیورٹی ذرائع نے "وفا" کو بتایا کہ قابض فورسز نے چھاپے کے دوران دو شہریوں کو گرفتار کرلیا۔ پرانے شہر کے قریون محلے سے عزالدین توقان کو اس کے گھر کی تلاشی لینے کے بعد اور فطایر سٹریٹ سے نضال طبنجہ کو حراست میں لیا گیا۔

مقامی ذرائع نے بتایا ہے کہ قابض فوج نے نابلس شہر کے متعدد علاقوں پر دھاوا بول دیا اور شہر کے پوشیدہ علاقوں میں تلاشی اور گرفتاری کی کارروائی جاری ہے۔

تقریباً دس روز قبل اسرائیلی میڈیا نے اعلان کیا تھا کہ نابلس کے جنوب میں حوارہ میں ایک تیز رفتار فلسطینی گاڑی سے کی گئی فائرنگ کے نتیجے میں دو اسرائیلی فوجی زخمی ہو گئے تھے۔ اسرائیلی فوج نے فائرنگ میں استعمال ہونے والی گاڑی کا سراغ لگانے کے لیے بڑے پیمانے پر کارروائیاں کی ہیں۔

خیال رہے اس سال کے آغاز سے "فلسطین اسرائیل تنازع" میں دونوں طرف سے 100 افراد مارے گئے ہیں۔ اسرائیلی سرکاری اور فلسطینی ذرائع سے اخذ کرکے ایجنسی فرانس پریس کی طرف سے مرتب کردہ ریکارڈ کے مطابق 86 فلسطینی، 13 اسرائیلی اور ایک یوکرینی شہری موت کے منہ میں جا چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں