تل ابیب حملہ: اسرائیل نے مزید ریزرو اہلکار متحرک کر دئیے

نیتن یاھو انتظامیہ نے فیصلہ تل ابیب میں گاڑی تلے روندنے اور فائرنگ کے واقعہ کے بعد کیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

تل ابیب میں حملے کے بعد اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو نے ملٹری پولیس اور آرمی فورسز میں تمام ریزرو یونٹس کو متحرک کرنے کا حکم دے دیا۔ نیتن یاہو کے دفتر سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ وزیر اعظم نے شہریوں پر زور دیا ہے کہ وہ سیکیورٹی سروسز کی ہدایات پر عمل کریں۔

نیتن یاہو کا یہ فیصلہ تل ابیب میں گاڑی تلے روندنے اور فائرنگ کے ذریعے کیے گئے حملے میں ایک شخص کی ہلاکت اور 6 افراد کے زخمی ہونے کے بعد سامنے آیا ہے۔ یاد رہے حملہ کرنے والے کو بھی مار دیا گیا ہے۔ اس سے قبل وادی اردن میں نامعلوم افراد نے فائرنگ کر کے 3 یہودی خاتون آباد کاروں کو قتل کیا تھا۔

یہ حملہ گزشتہ تین ماہ میں اپنی نوعیت کا چوتھا حملہ تھا۔ یہ شمالی اور مغربی سرحدوں پر ایک رات میں کشیدگی کے بعد آیا۔ اسرائیلی وزیر دفاع یوو گیلنٹ نے سینیئر سیکیورٹی حکام کے ساتھ ملاقات کے بعد مغربی کنارے میں غیر قانونی یہودی بستیوں اور آباد کاروں کی نقل و حرکت کے مقامات کی سیکیورٹی بڑھانے کی ہدایت کی ہے۔

اسرائیلی فوج کے ترجمان نے کہا ہے کہ تل ابیب کشیدگی نہیں چاہتا لیکن اگر اس پر کوئی پابندی عائد کی جاتی ہے تو وہ اس کے لیے تیار ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں