’یتیموں کا باپ‘ کہلانے والے سعودی استاد کی حادثاتی موت پران کے چاہنےوالے دُکھی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب میں یتیموں کی دیکھ بھال اور ان کی کفالت میں پیش پیش رہنے والے استاد سعد بن مبارک الفدید ایک المناک ٹریفک حادثے میں چل بسے۔ ان کی وفات پر ان کے چاہنے والے صدمے سے دوچار ہیں اور ہر آنکھ اشک بار ہے۔

رفحاء گورنری سے تعلق رکھنے والے استاد سعد بن مبارک یتیموں کی دیکھ بھال کے لیے کام کرنے والی رؤم ایسوسی ایشن کے پلیٹ فارم سے یتیموں کی تعلیم کے لیے رضا کارانہ خدمات انجام دیتے تھے۔ وہ عمرہ کی سعادت حاصل کرنے کے بعد واپس اپنے علاقے کی طرف لوٹ رہے تھے کہ ایک المناک ٹریفک حادثے نے ان کی جان لے لی۔

اس استاد کے بارے میں سوشل میڈیا پر چرچا رہا کیونکہ وہ اپنے حسن سلوک اور نرم مزاجی کی وجہ سے بہت مشہور تھے۔

’ٹویٹر‘ پر ہیش ٹیگ #سعد_مبارک_الفدید_ ہم سے جدا ہو گئے کے الفاظ کے ساتھ انہیں خراج عقیدت پیش کیا جا رہا ہے۔ ان کی وفات پر طلبا اور اساتذہ کے علاوہ عام شہریوں نے بھی گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے۔

سوشل میڈیا پر سعد بن مبارک الفدید کی وفات کو رفحاء گورنری کےلیے ایک بڑا نقصان قرار دیا ہے۔ سوشل میڈیا کارکنوں کا کہنا ہے کہ مرحوم اپنے حسن اخلاق اور یمتیموں کی کفالت کی وجہ سے جانتے جاتے تھے.

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں