عراق: رمضان میں دن دیہاڑے سڑک پر لڑکی کو ہراساں کیے جانے کے واقعے پرعوام میں غصہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

رمضان المبارک میں دن دیہاڑے سڑک کے بیچوں بیچ ایک عراقی لڑکی کو ہراساں کرنے کی ویڈیو نے عراقیوں کو چونکا دیا اور سوشل میڈیا پراس واقعے پر بڑے پیمانے پر غصے کا اظہار کیا جا رہا ہے۔

عراقی سوشل میڈیا پربصرہ شہرمیں ایک لڑکی کو ہراساں کرنے کے ایک واقعے کا ایک کلپ وائرل ہے۔ شہریوں نےحکام سے مطالبہ کیا کہ ہراساں کرنے والوں کی تصاویر منظر عام پر لائیں اور ان کےخلاف قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے تاکہ وہ دوسروں کے لیے مثال بن سکی اور ایسے واقعات دوبارہ رونما نہ ہوں۔

ٹویٹر پر سرگرم کارکنوں میں سے ایک نے ہراساں کرنے والوں کو بے نقاب کرنے، اس طرح کے واقعات کی روک تھام اور جرائم میں ملوث عناصر کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا۔

آج پیر کو بصرہ پولیس کمان نے سوشل میڈیا پر گردش کرنے والی ایک ویڈیو میں ایک لڑکی کو ہراساں کرنے والے شخص کی گرفتاری کا اعلان کیا ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ ملزم کے خلاف تمام قانونی اقدامات کیے جائیں گے۔

قابل ذکر ہے کہ عراق نے گذشتہ سال کے دوران مختلف گورنریوں میں ہراساں کرنے کے متعدد واقعات سامنے آئے جس میں انسدادی قانون سازی کے مطالبات کیے گئے تھے۔

پچھلے سال عراقی وومن میڈیا فورم کے جاری کردہ غیر سرکاری اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ ملک میں 77 فی صد خواتین اور لڑکیوں کو براہ راست ہراساں کیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں