مسجد حرام: معتکفہ خواتین کے لیے خدمات کا مربوط نظام، مسجد نبوی میں بھی 700 معتکفات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

مسجد حرام میں اعتکاف میں بیٹھنے والی خواتین کی خدمت کے لیے مربوط نظام قائم کردیا گیا۔۔ مسجد نبوی صلی اللہ علیہ وسلم میں بھی 700 معتکفات کو بہتر سہولیات کے لیے انتظام کردیا گیا ۔

حرمین شریفین کے امور کے منتظم ادارے نے بتایا ہے کہ مسجد حرام میں رمضان المبارک کے آخری عشرہ میں خواتین کی بڑی تعداد بھی اعتکاف میں بیٹھی ہے۔ معتکفات کے لیے خواتین کی خدمت کے امور کی ایجنسی نے تیاریاں کی ہیں۔ مسجد حرام میں اعتکاف کی عبادت میں مشغول خواتین کے لیے خصوصی یونٹ خدمات انجام دے رہا ہے۔

مسجد نبوی
مسجد نبوی

امور حرمین شریفین کے ادارہ ’’جنرل پریذیڈنسی‘‘ کی انڈر سیکرٹری برائے امور خواتین ڈاکٹر نورہ بنت ھلیل الذویبی نے کہا کہ تیاریوں میں ایوان صدر کی ویب سائٹ کے ذریعے خواتین کو اجازت دی گئی ہے، خدمات کے لیے مقامات کو مختص کیا گیا ہے، ان کے لیے پرسکون ماحول فراہم کیا گیا ہے۔ خواتین کو روحانیت سے بھرپور پرسکون ماحول فراہم کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ "خواتین" کے لیے شاہ عبداللہ کی توسیع میں پہلی منزل پر پچھلی اور درمیانی عبادت گاہوں کی منظوری دی گئی تھی۔ خواتین کو مسجد حرام کے دیگر مقامات اور اور اس کے صحنوں میں اعتکاف کرنے کی اجازت نہیں ہے۔

انہوں نے وضاحت کی ہے کہ جو چیز اس سال خواتین کے اعتکاف کے نظام کو ممتاز کرتی ہے وہ انسٹی ٹیوٹ اینڈ کالج آف مسجد حرام کی خواتین طالبات اور فیکلٹی ممبران کے لیے اعتکاف میں شامل ہونا ہے۔ معتکفات کے لیے ایک طبی ٹیم بھی مختص کردی گئی ہے۔ اعتکاف کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لیے گھڑی، مسجد کے انسٹی ٹیوٹ اور کالج کے عملے سے رضاکاروں کو مختص کیا گیا۔ یہ رضا کار 24 گھنٹے معتکفہ خواتین کی خدمت کے لیے دستیاب ہیں۔

مسجد نبوی صلی اللہ علیہ وسلم میں سٹریٹجک پلاننگ کی اسسٹنٹ انڈر سیکریٹری فایزہ المزینی نے تصدیق کی کہ 700 خواتین مسجد نبوی میں اعتکاف کر سکتی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ اعتکاف کے لیے درخواستیں وصول کرنا اور اجازت نامے جاری کرنا ایپ "زائرون" کے ذریعے الیکٹرانک طور پر کیا گیا ہے۔

المزینی نے جمعرات کو نجی ٹی وی کو بتایا کہ کہ ایجنسی رمضان المبارک کے موسم کی آمد سے کئی ماہ قبل آپریشنل تیاری کر رہی ہے۔ اس حوالے سے منصوبہ بنایا جارہا اور اقدامات کیے جارہے ہیں۔

رمضان المبارک کے آخری عشرہ کے دوران مسجد نبوی میں سال بھر سے زیادہ زائرین اور نمازی موجود ہوتے ہیں۔ مسجد کا اندرونی حصہ، بروین صحن، مسجد کی چھت اور اس کی گزرگاہیں نماز کے دوران نمازیوں سے بھر جاتی ہیں۔ لوگوں کی بڑی تعداد اللہ رب العزت کی رضا، اجر کے حصول، بخشش کی طلب اور لیلۃ القدر کی تلاش میں مسجد نبوی صلی اللہ علیہ وسلم میں تشریف لاتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں