عراق: امام مہدی کے ظہور کا اعلان کرنیوالے گروپ کے 65 افراد کو گرفتار کرلیا گیا

صدرسٹ موومنٹ کے سربراہ مقتدی الصدر ہی شیعہ کے بارہویں امام ہیں: ’’اصحاب قضیہ‘‘ نامی گروپ کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عراق میں شیعوں کے بارھویں امام کے طور پر امام مہدی کے ظہور کااعلان کرنے والے 65 افراد کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔ یہ افراد ’’اصحاب قضیہ‘‘ کے نام سے معروف گروپ سے وابستہ ہیں۔

کرخ کی تفتیشی عدالت نے اس دعوے کے بعد کہ صدرسٹ تحریک کے رہنما مقتدی الصدر ہی امام مہدی ہیں اور اہل تشیع کے بارہویں امام ہیں۔ ’’اہل قضیہ‘‘ گروپ کے 65 افراد کی گرفتاری کا اعلان کردیا ہے۔ عدالت نے ایک بیان میں کہا یہ گرفتاریاں قومی سلامتی ایجنسی کے ساتھ ہم آہنگی سے ہوئی۔

یہ عدالتی اقدام مذہبی لباس میں ملبوس ایک نامعلوم شخص کے سامنے آنے کے بعد سامنے آیا ہے جو گزشتہ چند دنوں کے دوران عراقیوں کے درمیان بڑے پیمانے پر گردش کرنے والی ایک ویڈیو میں مقتدی الصدر سے امام مہدی کے طور پر بیعت کر رہا ہے۔ وہ نامعلوم شخص مقتدی الصدر کی حمایت کا عہد کرنے کے اعلان کر رہا ہے۔ اس شخص نے صدرسٹ تحریک کے تمام حامیوں سے بھی مطالبہ کیا کہ وہ ان سے وفاداری کی بیعت کریں۔

مقتدی الصدر نے ایک روز قبل صدرسٹ تحریک کی تمام سرگرمیاں منجمد کرنے کا اس بنا پر اعلان کردیا تھا کہ اس تحریک میں بدعنوان لوگ موجود ہیں۔

مقتدی الصدر نے جمعہ کو اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر ایک ٹویٹ کے ذریعے کہا کہ یہ ایک شرمناک بات ہے کہ وہ اپنی پارٹی کی قیادت کر رہے ہیں اور کچھ بدعنوان لوگ اس میں شامل ہیں۔

واضح رہے مقتدی الصدر نے گزشتہ سال اگست 2022 میں سیاسی کام سے مستقل طور پر ریٹائرمنٹ کا اعلان کردیا تھا۔ اس اقدام سے اس وقت ان کے حامی مشتعل ہوگئے تھے۔ انہوں نے وسطی بغداد میں گرین زون میں متعدد سرکاری اداروں اور ریپبلکن پیلس پر دھاوا بول دیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں