یمن: قانونی حیثیت کے حامی اتحاد کا انسانی اقدام کے تحت 104 حوثی قیدی رہا کرنیکا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یمن میں قانونی حیثیت کی بحالی کے لیے اتحاد کے ترجمان ترکی المالکی نے پیر کے روز اتحاد کے زیر حراست 104 حوثی قیدیوں کو رہا کرنے کا اعلان کردیا۔ انہوں نے انسانی ہمدردی کی بنیاد پر سعودی عرب کی جانب سے پہل کرنے اور قیدیوں اور زیر حراست افراد کے تبادلے کو مکمل کرنے کا اعلان کردیا۔

سعودی پریس ایجنسی نے ترکی المالکی کے حوالے سے بتایا کہ یہ اقدام جنگ بندی کو مستحکم کرنے اور یمنی بحران کو ختم کرنے والے جامع اور پائیدار سیاسی حل تک پہنچنے کے لیے یمنی فریقوں کے درمیان بات چیت کی فضا پیدا کرنے کی کوششوں کی حمایت کے لیے کیا گیا ہے ۔

’’دا کولیشن ٹو ریسٹور لیجٹمیسی‘‘ کے ترجمان نے کہا کہ ان قیدیوں کی رہائی کا طریقہ کار ریڈ کراس کی بین الاقوامی کمیٹی کے تعاون سے مکمل کیا گیا اور انہیں آج صنعاء منتقل کر دیا گیا۔

اتحادی ترجمان ترکی المالکی نے کہا کہ اس اقدام کا مقصد تنازع کے فریقین پر زور دینا ہے کہ وہ قیدیوں اور زیر حراست افراد کے تبادلے کے عمل کی حمایت کریں اور اس معاملہ کو جلد ختم کردیں۔ انہوں نے کہا کہ قیدیوں اور نظربند افراد کے تبادلے کو ختم کرنے کا معاملہ سیاسی اور عسکری مفاد میں ہے ۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں