سعودی وزیرخارجہ فیصل بن فرحان کی دمشق میں شامی صدر بشارالاسد سے ملاقات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے منگل کی سہ پہر شام کے دارالحکومت دمشق پہنچے ہیں۔انھوں نے شامی صدر بشارالاسد سے ملاقات کی ہے۔

سعودی وزارتِ خارجہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ شہزادہ فیصل کا دورہ شام کے بحران کے سیاسی حل تک پہنچنے کی سعودی عرب کی خواہش اور دلچسپی کے دائرے میں آتا ہے۔سعودی عرب شام کے بحران کے ایسے حل کا حامی ہے جو اس کے اتحاد، سلامتی، استحکام اور اس کی عرب شناخت کو برقرار رکھے اور اسے اس کے عرب ماحول میں اس طرح بحال کرے جس سے اس کے برادرعوام کی فلاح وبہبود میں مدد ملے۔

بشار الأسد وفيصل بن فرحان
بشار الأسد وفيصل بن فرحان

بیان میں مزیدکہا گیا ہے کہ شہزادہ فیصل کا ایئرپورٹ پراستقبال وزیرایوان صدر منصور عزام نے کیا۔وہ یہ دورہ شامی وزیرخارجہ ڈاکٹر فیصل المقداد کے سعودی عرب کے دورے کے چند روز بعد کررہے ہیں۔2011 میں شام میں خانہ جنگی چھڑنے کے بعد ان کا سعودی عرب کا یہ پہلا دورہ تھا۔

خلیج تعاون کونسل، مصر، اردن اور عراق کے وزرائے خارجہ نے جدہ میں ایک اجلاس منعقد کیا ہے اوراس میں شامی وزیرخارجہ کے دورے کے بعد شام کی عرب ممالک میں ممکنہ واپسی پر تبادلہ خیال کیا گیا ہے۔

سعودی عرب اور شام نے سفارتی تعلقات بحال کرنے سے اتفاق کیا ہے۔واضح رہے کہ 19 مئی کو الریاض میں عرب لیگ کا آیندہ سربراہ اجلاس ہورہا ہے اور اس سے قبل شام کی تنظیم میں واپسی کے لیے سیاسی سرگرمیوں میں تیزی آئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں