جنگ بندی کے لیے سوڈان کے متحارب فریقین کے ساتھ رابطے میں ہیں:سعودی سفیر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سوڈان میں تعینات سعودی عرب کے سفیر نےکہا ہے کہ ان کا ملک سوڈان میں متحارب فریقین کے ساتھ رابطے میں ہے تاکہ جنگ بندی کی راہ ہموار کی جا سکے۔

کل پیر کو خرطوم میں سعودی سفیر علی بن حسن جعفر نے العربیہ اور الحدث کے ساتھ ایک انٹرویو میں اس بات کی تصدیق کی کہ سوڈان سے عرب اور غیر ملکی شہریوں کا انخلاء جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ عرب اور بیرونی ممالک کے درمیان شہریوں کے انخلاء کے لیے مملکت کے ساتھ ہم آہنگی پیدا ہو گئی ہے۔

"امن مساعی "

انہوں نے مزید کہا کہ 2,000 سے زائد افراد کو لے جانے والے بحری جہاز پورٹ سوڈان سے روانہ ہونے والے ہیں۔

انہوں نے اس بات پر بھی زور دیا کہ سوڈان میں حالات کو پرسکون بنانے اور جنگ بندی کی کوششیں جاری ہیں۔ سہ فریقی طریقہ کار فوج اور سریع الحرکت فورسز کے درمیان کشیدگی کو روکنے کے لیے کام کر رہا ہے۔

"قیادت نے تمام سہولیات فراہم کیں"

خرطوم میں متعین سعودی سفیر نے کہا کہ "ہم جنگ بندی کے لیے سوڈان میں تنازع کے دونوں فریقوں کے ساتھ بات چیت کر رہے ہیں" انہوں نے کہا کہ سعودی قیادت نے سوڈان سے انخلاء کے لیے تمام سہولیات فراہم کی ہیں۔

قابل ذکر ہے کہ سوڈانی فوج اور سریع الحرکت فورسز کے درمیان جاری لڑائیوں نے بہت سے ممالک کو اپنے شہریوں یا اپنے سفارت خانوں کے ملازمین کو زمینی، ہوائی اور سمندری راستے سے نکالنے پر مجبور کیا ہے۔

پورٹ سوڈان تک زمینی سفر وہ راستہ تھا جو سعودی عرب نے ہفتے کے روز شہریوں کو بحیرہ احمر کے اس پار جدہ پہنچانے سے پہلے اپنے پہلے اعلان کردہ انخلاء میں اپنایا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں