سعودی پبلک انویسٹمنٹ فنڈ کی فلائی ناس کے شیئرز خریدنے کے لیے بات چیت ہو رہی: بلومبرگ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بلومبرگ کے باخبر ذرائع کے مطابق پبلک انویسٹمنٹ فنڈ مملکت کے سیاحت کے شعبے کو فروغ دینے کے لیے سعودی عرب کی " فلائی ناس‘‘ میں حصص خریدنے کے لیے بات چیت کر رہا ہے۔

ذرائع نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بلومبرگ کو بتایا ہے کہ معلومات عام نہیں ہیں۔ گولڈمین سیکس فلائی ناس کی پی آئی ایف کو ممکنہ فروخت کے متعلق شیئر ہولڈرز کو مشورہ دے رہا ہے۔

فلائناس ایک کم لاگت والی ایئر لائن ہے۔ یہ جزوی طور پر شہزادہ الولید بن طلال کی کنگڈم ہولڈنگ کمپنی کی ملکیت ہے۔ اس میں پبلک انویسٹمنٹ فنڈ نے گزشتہ سال 17 فیصد حصص خریدے تھے۔

ذرائع نے بتایا کہ "فلائی ناس" ممکنہ فہرست سازی کی منصوبہ بندی کر رہا تھا ۔ اگر PIF کو حصص کی فروخت جاری رہتی ہے تو پیشکش میں تاخیر ہو سکتی ہے۔

بلومبرگ نیوز نے رپورٹ کیا کہ کمپنی 2008 سے آئی پی او پر غور کر رہی تھی۔ 2018 میں اس نے ممکنہ معاہدے کے لیے مورگن سٹینلے اور سٹی گروپ انکارپوریشن اور این سی بی کیپیٹل میں سے ہر کے ساتھ اتفاق کیا تھا۔

فلائی ناس، گولڈمین سیکس اور پبلک انویسٹمنٹ فنڈ نے اس حوالے سے تبصرہ کرنے سے انکار کردیا ہے۔ کنگڈم ہولڈنگ کے نمائندوں سے فوری طور پر تبصرہ کے لیے رابطہ نہیں ہو سکا۔

فروری میں سعودی ایئر لائن فلائی ناس نے کہا تھا کہ اسے جدید ترین ’’اے 320 نیو ایئربس ‘‘ طیارے موصول ہوئے ہیں جس سے اس کے بیڑے کا حجم 44 طیاروں تک پہنچ جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں