اردنی ولی عہد شہزادہ حسین بن عبداللہ کا اپنی سعودی منگیتر رجوہ کے ساتھ تعارف کیسے ہوا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

اردن کے ولی عہد شہزادہ عبداللہ بن الحسین کی اپنی سعودی منگیتر رجوہ آل السیف کو جمعہ کے روز ان کی سالگرہ پر مبارک باد پیش کرنے کے بعد دونوں عوامی حلقوں میں زیر بحث ہیں۔

شہزادہ حسین بن عبداللہ نے ایک نیا سرپرائز دے کر اپنے مداحوں کے سوالوں کا جواب دے دیا ہے۔

شہزادہ الحسین بن عبداللہ دوم نے انکشاف کیا کہ ان کی منگیتر رجوہ آل السیف سے ان کی شادی کی تاریخ قریب آ رہی ہے جیسا کہ وہ ایک دوسرے کو جانتے تھے۔

اردن کے ولی عہد شہزادہ الحسین نے مکالمے کے سیشن کے شرکاء میں سے ایک کے سوال کا جواب دیا جس میں شہزادے نے اردن کے دارالحکومت عمان میں کراؤن پرنس فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام "کمیونیکیشن" فورم میں شرکت کی تھی۔ اس سیشن میں ان سے پوچھا گیا تھا کہ ان کی رجوہ سے ملاقات کیسے اور کب ہوئی اور ان کے ساتھ کیسے تعارف ہوا تھا۔ اس سوال پرانہوں نے کہاکہ "میرا اپنی منگیتر رجوہ سے تعارف اسکول میں اپنی ایک ہم جماعت کے ذریعے ہوا‘‘۔

انہوں نے مزید کہا کہ "بات چیت اور ملاقات ہوئی۔ اس کے بعد ہم نے مزید بات چیت کی اور کچھ دیر پہلے منگنی ہو گئی۔"

ولی عہد نے اپنی منگیتر محترمہ رجوہ خالد السیف کی موجودگی میں فورم کے اجلاس سے خطاب کیا۔ اس موقعے پر وزیر اعظم ڈاکٹر بشر الخصاونہ اور متعدد وزراء موجودگ تھے۔ انہوں نے کہا کہ وہ اور مس رجوہ آرام اور سکون محسوس کرتے ہیں۔

سالگرہ کی مبارکباد

اردن کے ولی عہد الحسین بن عبداللہ دوم نے اپنی منگیتر رجوہ آل السیف کو ان کی سالگرہ کے موقع پر مبارکباد دی ہے جو کہ جمعہ کو تھی۔

انہوں نے انسٹاگرام پر اپنے اکاؤنٹ کے ذریعے اپنی سعودی منگیتر جو ایک سیاہ اور سفید گھوڑے کے ساتھ شائع کردہ تصویر پر بھی لکھا: "میری قیمتی امید! ہر سال ہم پیار مودت کے نقش قدم پر چلتے ہیں۔ میں آپ کے ساتھ قناعت اور محبت سے بھری زندگی کی آرزو لیے ہوئے ہوں۔"

قابل ذکر ہے کہ اردن کی شاہی عدالت نے گذشتہ اگست میں دونوں کی منگنی کا اعلان کرنے کے بعد خالد السیف کی خواہش پر اردنی ولی عہد کی شادی کی تاریخ کا اعلان آئندہ یکم جون کو کیا تھا۔

شہزادہ حسین نے اردن کے بادشاہ شاہ عبداللہ دوم اور ان کی اہلیہ ملکہ رانیہ کی موجودگی میں سعودی عرب میں خالد بن موسیٰ آل السیف کی خواہش پر منگنی کی۔


رجوہ آل السیف کون ہیں؟

رجوہ بنت خالد بن موسیٰ بن سیف بن عبدالعزیز آل السیف 28 اپریل 1994 کو ریاض میں خالد بن موسیٰ بن سیف بن عبدالعزیز السیف اور عزہ بنت نائف عبدالعزیز احمد السدیری کے ہاں پیدا ہوئیں۔ وہ فیصل نایف اور دانا کی چھوٹی بہن ہیں۔

اس نے اپنی ہائی اسکول کی تعلیم مملکت سعودی عرب میں حاصل کی اور اعلیٰ تعلیم نیویارک میں امریکا کی سائراکیز یونیورسٹی کے اسکول آف آرکیٹیکچر سے حاصل کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں