یمن میں نوجوان نے والد کا سر ہتھوڑے سے کچل ڈالا

ہفتے میں اس قسم کا تیسرا واقعہ سامنے آگیا، دو دن قبل ایک حوثی نے ماں کو کلہاڑی سے قتل کیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

وسطی یمن کے شہر ’’اب‘‘ میں ایک نوجوان نے اپنے والد کو بے دردی سے قتل کر دیا۔ ایک ہفتے کے اندر حوثی ملیشیا کے زیر کنٹرول گورنری میں اپنی نوعیت کا یہ تیسرا واقعہ ہے۔

مقامی نیوز ویب سائٹس نے بتایا کہ پیر کو "الحداد" خاندان کے ایک شہری کی لاش ملی جسے ’’اِب‘‘ کے وسط میں ’’الوازعیہ‘‘ محلے کے سکول ’’ ارویٰ‘‘ کے قریب ہولناک طریقے سے قتل کیا گیا۔

مقتول مردہ حالت میں پایا گیا اور ہتھوڑے سے مارنے کے نتیجے میں اس کا سر مکمل طور پر توڑ دیا گیا تھا۔ بعد میں پتہ چلا کہ ہلا کر رکھ دینے والے اس بھیانک جرم کے پیچھے اس کے ایک بیٹے کا ہاتھ ہے۔

جرم کی وجوہات ابھی تک معلوم نہیں ہوسکی ہیں۔ اِب کے مغرب میں واقع العدین شہر میں ایک حوثی رکن نے دو دن قبل اپنی والدہ کو کلہاڑی کے وار کرکے ابدی نیند سلا دیا تھا۔ گزشتہ منگل کو ایک بندوق بردار نے ’’حزم العدین‘‘ ضلع میں اپنے خاندان کے چار افراد کو قتل کر دیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں