برین ڈیڈ شخص نے اعضا عطیہ کرکے 3 سعودیوں کی جان بچا لی

اعضاء کی تقسیم طبی اخلاقیات اور مریضوں کی طبی ترجیحات کے مطابق ہوئی: ڈی جی سعودی سینٹر فار آرگن ٹرانسپلانٹیشن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی سینٹر فار آرگن ٹرانسپلانٹیشن نے انکشاف کیا ہے کہ طبی ٹیموں نے نجران جنرل ہسپتال میں دماغی طور پر مردہ شخص کے اعضاء کی منتقلی میں کامیابی کے بعد 3 مریضوں کی جانیں بچا لی گئی ہیں۔

مرکز نے اس بات کی تصدیق کی کہ طبی ٹیمیں ایک 52 سالہ شہری کی شدید جگر کی کمی کے ساتھ تکلیف کو ختم کرنے میں کامیاب ہوگئیں۔ اس کے علاوہ 47 سال کے ایک شہری اور 32 سال کے ایک شہری کے گردے کی پیوند کاری کردی گئی ۔

سینٹر کے ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر طلال القوفی نے وضاحت کی کہ اعضاء کی تقسیم کا عمل طبی اخلاقیات کے مطابق کیا گیا تاکہ مریضوں کی طبی ترجیحات کے مطابق منصفانہ تقسیم کو یقینی بنایا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ یہ کامیابی تمام متعلقہ فریقوں کے درمیان مشترکہ تعاون کے نتیجے میں ہوئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں