اسلامی جہاد غزہ

جنگ بندی تک نہیں پہنچ سکے،گولی کا جواب گولی سے دیں گے:اسرائیلی عہدیدار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

جمعرات کو ایک سینیر اسرائیلی اہلکار نے اسلامی جہاد پر جنگ بندی مذاکرات کو سبوتاژ کرنے کا الزام لگاتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ اسرائیل گولی کا جواب گولی سے دےگا۔

"ٹائمز آف اسرائیل" اخبار کے مطابق اس اہلکار نےاپنی شناخت مخفی رکھتے ہوئے کہاکہ اسرائیل کو فائرنگ کا جواب فائرنگ کی شکل میں دینا ہوگا۔ اسلامی جہاد تحریک نے مصر کی جانب سے جنگ بندی کی کوششوں کے باوجود اسرائیل پر راکٹوں کا سلسلہ جاری رکھا ہوا اور اسلامی جہاد جنگ بندی کے مذاکرات کو نقصان پہنچا رہی ہے۔

نیا میزائل بیراج

اس کے ساتھ ہی العربیہ کے نامہ نگار نے اطلاع دی ہے کہ اسلامی جہاد نے مزید متعدد راکٹ عسقلان کی طرف فائر کیے اور ان میں سدیروت بستی میں مکانات کو نشانہ بنایا گیا۔

انہوں نے بتایا کہ راکٹ ریشن لیزیون اور ہولون، وسطی اسرائیل تک پہنچ گئے ہیں۔

سائرن کی آواز

فلسطینی میڈیا کا کہنا ہے کہ صوفہ، بری جان، اشکول، زیکیم، مکیم اور عرب جزیرہ النقب میں بھی سائرن بجے۔

اس کے علاوہ غزہ کی پٹی میں وزارت صحت نے جمعرات کو اعلان کیا ہے کہ منگل سے غزہ کی پٹی پرجاری اسرائیلی بمباری سے ہلاکتوں کی تعداد 28 ہو گئی ہے اور 93 زخمی ہو گئے ہیں۔

جب کہ اسلامی جہاد موومنٹ نے اس عزم کا اظہار کیا کہ اسرائیل کو اس کے کمانڈروں اور کارکنوں کے قتل کا حساب چکانا پڑے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں