سعودی عرب کے تعاون سے 24 ہزار ٹن گندم یمن پہنچ گئی

گندم یمن کی چھ گورنریوں میں سب سے زیادہ ضرورت مندوں کو دی جائے گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی مالی امداد سے گندم کی ایک نئی کھیپ یمن کے عبوری دارالحکومت عدن پہنچ گئی ہے۔ اس امدادی گندم کی ترسیل کا مقصد انسانی ہمدردی کی بنیاد پر کیے جانے والے مطالبوں پر لبیک کہتے ہوئے 6 گورنریوں میں سب سے زیادہ ضرورت مند افراد کی بنیادی غذائی ضرورت کو پورا کرنا ہے۔

ورلڈ فوڈ پروگرام (ڈبلیو ایف پی) نے اتوار کو اپنی ٹویٹ میں کہا کہ عدن کی بندرگاہ پر 24 ہزار میٹرک ٹن گندم پہنچی ہے۔ اس گندم کو شاہ سلمان انسانی امدادی مرکز نے فراہم کیا ہے۔

یہ پروگرام یمن میں کمزور خاندانوں کو خوراک کی اہم امداد فراہم کرنے کی کوششوں کے لیے شاہ سلمان مرکز کی مسلسل حمایت کا اظہار اور ستائش کرتا ہے۔ یہ فراخدلانہ عطیہ یمنی خاندانوں کے لیے ایک لائف لائن ہے۔ اس امدادی کھیپ کی بدولت ہم فوری نوعیت کی ضروریات کو پورا کر سکیں گے۔

سعودی پریس ایجنسی نے جمعہ کے روز اطلاع دی تھی کہ کنگ سلمان سنٹر کی طرف سے بھیجی گئی گندم کی کھیپ اس منصوبے کے تحت ہے جس کے تحت یمن میں خوراک کی تحفظ کو سپورٹ کیا جارہا ہے۔ اسے یمن کے 6 اضلاع میں ضرورت مند اور بے آسرا خاندانوں میں تقسیم کیا جائے گا۔

واضح رہے شاہ سلمان ریلیف سنٹر نے گزشتہ دسمبر میں ورلڈ فوڈ پروگرام کے ساتھ 20 ملین ڈالر کے ایک معاہدے پر دستخط کیے تھے جس کے مطابق یمن کے انتہائی ضرورت مند گروپوں کے تقریباً 524.8 ہزار افراد کی بنیادی غذائی ضروریات کو پورا کیا جاتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں