متحدہ عرب امارات کی مسجد اقصیٰ پر یہودی آباد کاروں کے دھاووں کی شدید مذمت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

متحدہ عرب امارات نے جمعرات کے روز یروشلم میں مسجد اقصیٰ پر اسرائیلی پولیس کی حفاظت میں اسرائیلی حکومت کے ایک رکن، کنیسٹ کے ارکان اور انتہا پسندوں کی طرف سے دھاوے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

ایک بیان میں متحدہ عرب امارات کی وزارت خارجہ نے مسجد اقصیٰ کو مکمل تحفظ فراہم کرنے اور اس میں خطرناک اور اشتعال انگیز خلاف ورزیوں کو روکنے کی ضرورت کے حوالے سے متحدہ عرب امارات کے مضبوط موقف کا اعادہ کیا۔

وزارت خارجہ نے بین الاقوامی قانون اور موجودہ تاریخی صورتحال کے مطابق مقدس مقامات اور اوقاف کی دیکھ بھال میں اردن کے کردار کے احترام کی اہمیت پر زور دیا۔

وزارت خارجہ نے اسرائیلی حکام سے مطالبہ کیا کہ وہ کشیدگی کو روکیں اور خطے میں کشیدگی اور عدم استحکام کو بڑھانے کے لیے اقدامات نہ کریں۔ متحدہ عرب امارات کی جانب سے ان تمام اقدامات کو مسترد کرنے پر زور دیا جو بین الاقوامی قراردادوں کی خلاف ورزی کا باعث بنتے ہیں اور خطرات میں اضافہ کرتے ہیں۔

امارات کی وزارت خارجہ نے مشرق وسطیٰ میں امن کے عمل کو آگے بڑھانے کے لیے تمام علاقائی اور بین الاقوامی کوششوں کی حمایت کرنے کے ساتھ ساتھ ان غیر قانونی طریقوں کو ختم کرنے کی اہمیت پر زور دیا جو دو ریاستی حل تک پہنچنے اورمشرقی یروشلم کے دارالحکومت پرمشتمل 1967 کی سرحدوں پر ایک آزاد فلسطینی ریاست کے قیام کے لیے خطرہ ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں