مسجد اقصیٰ پر اسرائیلی حملے کی مذمت،اشتعال انگیز اقدامات کو مسترد کرتے ہیں: سعودی عرب

اسرائیلی رہنما اور کنیسٹ ارکان کے مسجد اقصیٰ پر دھاوے کی مذمت کرتے اور اشتعال انگیز اقدامات کو یکسر مسترد کرتے ہیں: سعودی وزارت خارجہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب نے آج جمعہ کے روز سکیورٹی فورسز کی حفاظت میں ایک اسرائیلی رہنما اور کنیسٹ ارکان کی جانب سے مسجد اقصیٰ پر بولے گئے دھاوے کی شدید مذمت کی ہے۔

سعودی وزارت خارجہ نے "ٹوئٹر" پر اپنے بیان میں کہا کہ مملکت کی جانب سے اس طرح کی خلاف ورزیوں اور اشتعال انگیز کارروائیوں کو واضح طور پر مسترد کیا جاتا ہے۔ ہم فلسطینی عوام کے ساتھ کھڑے ہونے اور اس مسئلے کے منصفانہ اور مسئلہ فلسطین کے جامع حل تک پہنچنے کے لیے تمام کوششوں کی حمایت کرتے ہیں۔

خیال رہے جمعرات کو دسیوں ہزار اسرائیلی آباد کاروں نے القدس میں "فلیگ مارچ" میں شرکت کی۔ فلیگ مارچ 1967 میں مشرقی القدس کے مغربی القدس کے ساتھ الحاق کی یاد میں نکالا جاتا ہے۔

یہودی آباد کاروں کا فلیگ مارچ اولڈ سٹی کے مسلم کوارٹر سے گزرا۔ اس مارچ میں دائیں بازو کی جماعتوں کے وزراء اور کنیسٹ کے ارکان شامل تھے۔ مارچ کی سربراہی قومی سلامتی کے وزیر ایتمار بین گویر، وزیر توانائی یسرائیل کاٹز، اور نقب و الجلیل کے وزیر یتزاک واسرلیو کر رہے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں