غیرمعمولی موسمی تغیرات، سعودی عرب میں طوفانی ژالہ باری، گلیاں اولوں سے بند ہو گئیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

دنیا بھرمیں تیزی کے ساتھ تبدیل ہونے والے موسمی حالات کے باعث سعودی عرب کے علاقے خمیس مشیط اور عسیر میں طوفانی ژالہ باری کا ایک نیا ریکارڈ قائم ہوا ہے۔ شدید ژالہ باری کے باعث علاقے میں سڑکیں بند ہوگئیں اور گاڑیاں پھنس گئیں۔ ایسے لگ رہا ہے کہ اس علاقے میں اولے نہیں پڑے بلکہ شدید برف باری ہوئی ہے۔

سعودی عرب کے علاقے خمیس مشیط اور عسیرکے السودہ پہاڑوں کی چوٹیوں پر گذشتہ روز ہونے والی شدید بارش اور ژالہ باری سے موسم میں ٹھنڈہ ہوگیا۔

عسیر اور خمیس مشیط میں ہونے والی طوفانی ژالہ باری نے سڑکیں اور گلیاں بند کردیں۔ شدید ژالہ باری کے سوشل میڈیا پر پوسٹ کیے گئے مناظر میں ایسا لگ رہا ہے کہ علاقے میں شدید برف باری ہوئی ہے جسے ہٹانےکے لیے مشینری کا استعمال کیا جا رہا ہے۔

خمیس مشیط میں ہونے والی ژالہ باری سے جہاں مقامی شہری اور سیاح لطف اندوز ہوئے وہیں شہری اس قدر خوفناک ژالہ باری پرحیران ہیں۔ علاقے میں ہونے والی ژالہ باری کی تہہ لگ گئی جس سے برف باری کا گمان گذرنے لگا۔

ژالہ باری کے نتیجے میں خمیس مشیط میں جمع ہونے والے اولوں کی وجہ سے گاڑیاں پھنس گئیں۔ سڑکیں کھولنے کے لیے انتظامیہ کو بلڈزور مشینیں لانا پڑیں۔

دوسری طرف نیشنل سینٹر آف میٹرولوجی کے سی ای او ڈاکٹر ایمن غلام نے ہدایت کی کہ طائف میں 28 رمضان المبارک اور خمیس مشیط میں 29 شوال کو شدید ژالہ باری کے موسمیاتی اسباب کا مطالعہ کیا جائے۔

محکمہ موسمیات کے قومی مرکز نے ٹویٹر پر طائف اور خمیس مشیط سے ہونے والے ژالہ باری کی ویڈیوز بھی نشرکیں جب کہ نیشنل سینٹر آف میٹرولوجی کے موسمی ریڈار نے گرج چمک کے ساتھ بارشوں میں اضافے کی پیش گوئی کی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں