دو سعودی خلا بازوں کی تاریخی مشن پر روانگی، ویڈیو آگئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

اتوار کو ناسا، سپیس ایکس، ایکسیم سپیس اور سعودی سپیس اتھارٹی نے مشترکہ طور پر ایک خصوصی مشن پر ایک راکٹ کو بین الاقوامی خلائی سٹیشن کی طرف روانہ کردیا۔ اس تاریخی مشن میں سعودی عرب کے دو خلا بازی ریانہ برناوی اور علی القرنی بھی موجود تھے۔

سپیس ایکس کی طرف سے تیار کردہ "فالکن 9" میزائل امریکہ کے فلوریڈا کے کینیڈی سپیس سینٹر سے لانچ کیا گیا۔ میزائل میں ناسا کے سابق خلا باز پیگی وائٹسن اور امریکی کاروباری جان شوفنر بھی تھے۔

سعودی عرب پہلا عرب ملک بن گیا

سعودی سپیس اتھارٹی کے نامزد سی ای او محمد بن سعود التمیمی نے انکشاف کیا کہ مملکت میں اب 3 خلاباز موجود ہیں جو خلا میں جا چکے ہیں۔ انہوں نے فلوریڈا سے العربیہ کو دیے گئے بیانات میں مزید کہا کہ سعودی عرب 3 خلاباز بھیجنے والے عرب دنیا کے پہلا ملک بن گیا۔

ناسا، کمپنی سپیس ا یکس، کمپنی ایکسیم سپیس اور سعودی سپیس اتھارٹی نے اتوار کی صبح فلوریڈا کے شہر اورلینڈو میں ایک پریس کانفرنس کے دوران تصدیق کی کہ خلائی مشن ‘‘ ایکس ٹو ’’ کی تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔ یہ چاروں خلا میں مائیکرو گریویٹی میں 14اہم سائنسی تحقیقی تجربات کریں گے۔

سعودی خلاباز

یاد رہے سعودی خلابازوں کا سفر سعودی عرب کے خلابازوں کے پروگرام کے فریم ورک کے اندر آتا ہے جس کا مقصد خلائی پروازوں کے لیے تجربہ کار سعودی کیڈرز کو تیار کرنا اور خلائی شعبہ سے متعلق سائنسی تجربات، بین الاقوامی تحقیق اور مستقبل کے مشنوں میں حصہ لینا ہے۔

تاریخی لمحہ

سعودی سپیس اتھارٹی کے مشیر انجینئر مشعیل الشمری خلابازوں ریانہ برناوی اور علی القرنی کے بین الاقوامی خلائی سٹیشن پہنچنے پر ان کے سائنسی مشن کے نفاذ پر اپنے اعتماد کا اظہار کیا اور کہا یہ سعودی عرب اور پورے عرب کے لیے ایک تاریخی لمحہ ہے۔ ان کا یہ سفر خطے میں سعودی اور عرب نوجوانوں کے لیے تحریک کا ذریعہ ہے۔

انہوں نے اس مشن میں ناسا، سپیس ایکس، ایگزیم سپیس کے تعاون کو بھی سراہا۔ انہوں نے مزید کہا کہ پوری مملکت میں سعودی شہری دو سعودی خلابازوں کے اس سائنسی مشن کے بارے میں پرجوش ہیں۔ انہوں نے کہا بین الاقوامی خلائی سٹیشن پر سعودی خلابازوں کے سائنسی مشن کے آغاز کے ساتھ اس حوالے سے ریاض، جدہ اور ظہران میں نمائشیں بھی لگائی جا رہی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں