خادم حرمین شریفین کی ہدایت پر شامی سیامی جڑواں بچے علاج کے لیے سعودی عرب منتقل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی قیادت کی ہدایت پرشامی سیامی جڑواں بچے احسان اور بسام اپنے والدین کے ہمراہ جمہوریہ ترکیہ سے فضائی طبی انخلاء کے طیارے کے ذریعے ریاض میں نیشنل گارڈ کےشاہ عبداللہ چلڈرن اسپیشلسٹ سینٹر پہنچا دیے گئے ہیں۔

بچوں کو ترکیہ سے شاہ خالد انٹرنیشنل ایئرپورٹ لایا گیا جہاں سے انہیں علاج کے لیے شاہ عبداللہ چلڈرن ہسپتال منتقل کیا گیا ہے۔ دوسری طرف بچوں کے والدین نے علاج کی سہولت فراہم کرنے پر خادم حرمین شریفین شاہ سلمان اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کا تہہ دل سے شکریہ ادا کیا ہے۔

خیال رہے کہ شام کےسیامی جڑواں بچوں کو علاج کے لیے سعودب عرب لانے کی خصوصی طور پر خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی طرف سے دی گئی تھی۔

شامی سیامی جڑواں بچے
شامی سیامی جڑواں بچے

شاہی دیوان کے مشیر ، شاہ سلمان سینٹر فار ریلیف اینڈ ہیومینٹیرین ایکشن کے جنرل سپروائزر، میڈیکل اور سرجیکل ٹیم کے سربراہ ڈاکٹر عبداللہ الربیعہ نے خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور ان کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کا تہہ دل سے شکریہ ادا کیا، جن کی اس عظیم انسان دوست کاوش سے دوست اور برادر ممالک کے خطرناک امراض کے شکار افراد کے علاج میں گہری دلچسپی کا مظاہرہ کیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سعودی عرب کی دانش مند قیادت بلا تفریق دوسرے ممالک کے سیامی جڑواں بچوں کو علاج کے لیے مملکت میں علاج کی سہولت فراہم کرتی ہے۔

دوسری طرف شامی جڑواں بچوں احسان اور بسام کے والدین نے فراخدلی سے رہنمائی ملنے پر خوشی کے جذبات کا اظہار کرتے ہوئے خادم حرمین شریفین اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کا تہہ دل سے شکریہ ادا کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں