اردن: بہن کو دفنانے کے چند گھنٹے بعد بھائی بارش میں بہہ کر چل بسا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

دنیا میں قابل افسوس اور الم سے بھرپور کہانیاں آئے روز سامنے آتی رہتی ہیں۔ ایسی ہی ایک کہانی اردن کے ایک نوجوان خلیل عبد النعیمات کی سامنے آئی ہے جس نے لوگوں کے دلوں کو گھائل کردیا ہے۔ یہ دردناک داستان اردن کے شہریوں کے ذہنوں میں نقش ہوکر رہ گئی ہے۔

اردن کی عقبہ گورنری کے علاقے الشامیہ میں خلیل عبد النعیمات کی بہن کا انتقال 28 مئی اتوار کی شام ہوا اور پیر کی علی الصبح خلیل طوفانی بارشوں کے باعث آنے والے پانی کے ریلے میں ڈوب کر جاں بحق ہوگیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ نے بتایا کہ 35 سالہ خلیل زرعی کریڈٹ کارپوریشن میں کام کرتا ہے۔ اتوار کو وہ اپنی مرحوم بہن فائزہ کی تدفین کے لیے گیا ۔ سوگواروں کے جانے کے بعد خلیل نے قرآن کریم کی تلاوت کی ۔ آخری الوداع کے لیے اس نے اپنی بہن کی قبر کے پاس رہنے کا فیصلہ کیا۔ وہ اپنی بہن کی قبر پر جا کر بیٹھا رہا۔ اپنی بہن کی قبر پر وقت گزار کر خلیل قبرستان سے نکلا اور اس کے کچھ ہی دیر بعد بارش کے پانی اسے اپنے ساتھ بہا لے گیا۔

خلیل النعیمات کی موت کی خبر نے زرعی برادری اور عقبہ گورنریٹ اور جنوبی بادیہ کے لوگوں کو صدمہ میں مبتلا کردیا اور سارے علاقے میں غم کی کیفیت طاری ہوگئی۔ بعد ازاں اس کی نعش مل گئی ۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں